Book - حدیث 685

کِتَابُ تَفْرِيعِ أَبْوَابِ السُّتْرَةِ بَابُ مَا يَسْتُرُ الْمُصَلِّيَ صحیح حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ كَثِيرٍ الْعَبْدِيُّ حَدَّثَنَا إِسْرَائِيلُ عَنْ سِمَاكٍ عَنْ مُوسَى بْنِ طَلْحَةَ عَنْ أَبِيهِ طَلْحَةَ بْنِ عُبَيْدِ اللَّهِ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِذَا جَعَلْتَ بَيْنَ يَدَيْكَ مِثْلَ مُؤَخِّرَةِ الرَّحْلِ فَلَا يَضُرُّكَ مَنْ مَرَّ بَيْنَ يَدَيْكَ

ترجمہ Book - حدیث 685

کتاب: سترے کے احکام ومسائل باب: کون سی چیز سترہ ہو سکتی ہے؟ سیدنا طلحہ بن عبیداللہ ؓ سے منقول ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا ” جب تم اپنے سامنے پالان کی پچھلی لکڑی کے برابر کوئی چیز رکھ لو تو تمہیں کوئی نقصان نہیں کہ کون تمہارے آگے سے گزرتا ہے ۔ “ معلوم ہواکہ سترہ نہ رکھنے سےنمازی کونقصان ہوتا ہے۔یعنی اس کے خشوع خضوع اوراجر میں کمی ہوتی ہے یاکم از کم اتباع امر کی تقصیر کانقصان توواضح ہے اور یہ سترہ کم از کم فٹ یا ڈیڑھ فٹ کے درمیان کوئی چیزہونی چاہیے ۔