Book - حدیث 5222

كِتَابُ السَّلَامِ بَابٌ فِي قُبْلَةِ الْخَدِّ صحيح حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ سَالِمٍ حَدَّثَنَا إِبْرَاهِيمُ بْنُ يُوسُفَ عَنْ أَبِيهِ عَنْ أَبِي إِسْحَقَ عَنْ الْبَرَاءِ قَالَ دَخَلْتُ مَعَ أَبِي بَكْرٍ أَوَّلَ مَا قَدِمَ الْمَدِينَةَ فَإِذَا عَائِشَةُ ابْنَتُهُ مُضْطَجِعَةٌ قَدْ أَصَابَتْهَا حُمَّى فَأَتَاهَا أَبُو بَكْرٍ فَقَالَ لَهَا كَيْفَ أَنْتِ يَا بُنَيَّةُ وَقَبَّلَ خَدَّهَا

ترجمہ Book - حدیث 5222

کتاب: السلام علیکم کہنے کے آداب باب: رخسار پر بوسہ دینا سیدنا براء ؓ بیان کرتے ہیں کہ میں سیدنا ابوبکر ؓ کے ساتھ آیا جبکہ یہ لوگ نئے نئے مدینہ آئے تھے ، اور ان کی صاحبزادی سیدہ عائشہ ؓا بخار کی وجہ سے لیٹی ہوئی تھی ، تو ابوبکر ؓ ان کے قریب ہوئے اور پوچھا : بٹیا تمہارا کیا حال ہے ؟ اور ان کے رخسار پر بوسہ بھی دیا ۔ باپ اپنی بیٹی کو رخسار پر بوسہ دے تو کوئی معیوب بات نہیں ہے-