Book - حدیث 5070

كِتَابُ النَّومِ بَابُ مَا يَقُولُ إِذَا أَصْبَحَ صحیح حَدَّثَنَا أَحْمَدُ بْنُ يُونُسَ، حَدَّثَنَا زُهَيْرٌ، حَدَّثَنَا الْوَلِيدُ بْنُ ثَعْلَبَةَ الطَّائِيُّ عَنِ ابْنِ بُرَيْدَةَ، عَنْ أَبِيهِ عَنِ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ، قَالَ: >مَنْ قَالَ حِينَ يُصْبِحُ أَوْ حِينَ يُمْسِي: اللَّهُمَّ أَنْتَ رَبِّي لَا إِلَهَ إِلَّا أَنْتَ، خَلَقْتَنِي وَأَنَا عَبْدُكَ، وَأَنَا عَلَى عَهْدِكَ وَوَعْدِكَ مَا اسْتَطَعْتُ، أَعُوذُ بِكَ مِنْ شَرِّ مَا صَنَعْتُ، أَبُوءُ بِنِعْمَتِكَ، وَأَبُوءُ بِذَنْبِي، فَاغْفِرْ لِي، إِنَّهُ لَا يَغْفِرُ الذُّنُوبَ إِلَّا أَنْتَ, فَمَاتَ مِنْ يَوْمِهِ أَوْ مِنْ لَيْلَتِهِ: دَخَلَ الْجَنَّةَ<.

ترجمہ Book - حدیث 5070

كتاب: سونے سے متعلق احکام ومسائل باب: صبح کے وقت کی دعائیں سیدنا عبداللہ اپنے والد بریدہ ؓ سے روایت کرتے ہیں کہ نبی کریم ﷺ نے فرمایا ” جو شخص صبح یا شام کے وقت یہ دعا پڑھ لے اور پھر اپنے اس دن یا رات میں فوت ہو جائے تو جنت میں داخل ہو گا ۔ “ ( الفاظ یہ ہیں ) «لا إله إلا أنت خلقتني وأنا عبدك وأنا على عهدك ووعدك استطعت أعوذ بك من شر صنعت أبوء بنعمتك وأبوء بذنبي فاغفر لي إنه لا يغفر الذنوب إلا أنت» ” اے اللہ ! تو ہی میرا رب ہے ۔ تیرے سوا کوئی معبود نہیں ۔ تو نے مجھے پیدا کیا ہے اور میں تیرا بندہ ہوں ، میں تیرے ساتھ کیے ہوئے عہد اور وعدے پر ، جہان تک میری ہمت ہے ، قائم ہوں ۔ میں اپنے کیے کے شر سے تیری پناہ چاہتا ہوں ۔ تیری نعمتیں جو مجھ پر ہیں مجھے ان کا اقرار ہے اور مجھے اپنے گناہوں کا بھی اعتراف ہے ۔ پس مجھے بخش دے ۔ بیشک تیرے سوا کوئی گناہوں کو نہیں بخشتا ۔ “ اس مبارک دعا کو سید الاستغفار کے نام سے یاد کیا جاتاہے کیونکہ ا س میں بندے کی طرف سے اللہ رب العالمین کے کمال عظمت وجلال کے اقرار کے ساتھ اپنی انتہائی عاجزی اور بندگی کا اظہار ہے۔