Book - حدیث 4820

كِتَابُ الْأَدَبِ بَابٌ فِي سَعَةِ الْمَجْلِسِ صحیح حَدَّثَنَا الْقَعْنَبِيُّ، حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ أَبِي الْمَوَالِ، عَنْ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ أَبِي عَمْرَةَ الْأَنْصَارِيِّ، عَنْ أَبِي سَعِيدٍ الْخُدْرِيِّ، قَالَ: سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَقُولُ: >خَيْرُ الْمَجَالِسِ أَوْسَعُهَا<. قَالَ أَبُو دَاوُد: هُوَ عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ عَمْرِو بْنِ أَبِي عَمْرَةَ الْأَنْصَارِيُّ.

ترجمہ Book - حدیث 4820

کتاب: آداب و اخلاق کا بیان باب: مجلس کو وسیع بنا لینے کا بیان سیدنا ابو سعید خدری ؓ کہتے ہیں کہ میں نے رسول اللہ ﷺ سے سنا آپ ﷺ فرماتے تھے ” بہترین مجلس وہ ہے جو وسیع اور کھلی ہو ۔ “ امام ابوداؤد ؓ فرماتے ہیں کہ راوی حدیث عبدالرحمٰن بن ابو عمرہ کا صحیح نسب یوں ہے ” عبدالرحمٰن بن عمرو بن ابو عمرہ الانصاری ۔ “ مجلس میں اگرافراد زیادہ ہوں تو حسن ادب اور وقار کا تقاضا ہے کہ حلقہ وسیع کع لیا جائے۔ اور اس قسم کے اعمال میں اتباع ِ فرمان ِ رسول ﷺ کی نیت شامل ہو تو ثواب زیادہ ملتا ہے۔