Book - حدیث 481

كِتَابُ الصَّلَاةِ بَابُ فِي كَرَاهِيَةِ الْبُزَاقِ فِي الْمَسْجِدِ حسن حَدَّثَنَا أَحْمَدُ بْنُ صَالِحٍ، حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ وَهْبٍ، أَخْبَرَنِي عَمْرٌو، عَنْ بَكْرِ بْنِ سَوَادَةَ الْجُذَامِيِّ، عَنْ صَالِحِ بْنِ خَيْوَانَ، عَنْ أَبِي سَهْلَةَ السَّائِبِ بْنِ خَلَّادٍ_ قَالَ أَحْمَدُ مِنْ أَصْحَابِ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ_، أَنَّ رَجُلًا أَمَّ قَوْمًا فَبَصَقَ فِي الْقِبْلَةِ وَرَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَنْظُرُ، فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ حِينَ فَرَغ:َ >لَا يُصَلِّي لَكُمْ<، فَأَرَادَ بَعْدَ ذَلِكَ أَنْ يُصَلِّيَ لَهُمْ، فَمَنَعُوهُ، وَأَخْبَرُوهُ بِقَوْلِ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ، فَذَكَرَ ذَلِكَ لِرَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ، فَقَالَ: نَعَمْ، وَحَسِبْتُ أَنَّهُ قَالَ: >إِنَّكَ آذَيْتَ اللَّهَ وَرَسُولَهُ<.

ترجمہ Book - حدیث 481

کتاب: نماز کے احکام ومسائل باب: مسجد میں تھوکنے کی کراہت سیدنا ابوسہلہ سائب بن خلاد سے روایت ہے ، احمد ( احمد بن صالح ، امام ابوداؤد ؓ کے استاد ) کہتے ہیں کہ وہ ( سائب ) ایک صحابی ہیں ۔ ان سے روایت ہے کہ ایک شخص نے اپنی قوم کی امامت کرائی اور اس نے قبلے کی جانب تھوک دیا جب کہ رسول اللہ ﷺ دیکھ رہے تھے ۔ جب وہ فارغ ہوا تو آپ ﷺ نے ( اس کی قوم سے ) فرمایا ” ( آیندہ ) یہ تمہیں نماز نہ پڑھائے ۔ “ اس کے بعد اس نے انہیں نماز پڑھانا چاہی تو انہوں نے اس کو روک دیا اور رسول اللہ ﷺ کا فرمان سنایا ۔ تو اس نے یہ بات رسول اللہ ﷺ سے ذکر کی تو آپ ﷺ نے فرمایا ” ہاں ۔ “ اور میرا خیال ہے کہ آپ ﷺ نے فرمایا ” تم نے اللہ اور اس کے رسول کو ایذا دی ہے ۔“ اس توبیخ پر قیاس کرتے ہوئے کہا جاسکتاہے۔کہ شریعت میں بیان کردہ آداب وحدود کی خلاف ورزی اللہ اور رسول کوایزا دینا ہے۔