Book - حدیث 4783

كِتَابُ الْأَدَبِ بَابُ مَا يُقَالُ عِنْدَ الْغَضَبِ صحيح لغيره حَدَّثَنَا وَهْبُ بْنُ بَقِيَّةَ، عَنْ خَالِدٍ، عَنْ دَاوُدَ، عَنْ بَكْرٍ, أَنَّ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ بَعَثَ أَبَا ذَرٍّ... بِهَذَا الْحَدِيثِ. قَالَ أَبُو دَاوُد: وَهَذَا أَصَحُّ الْحَدِيثَيْنِ.

ترجمہ Book - حدیث 4783

کتاب: آداب و اخلاق کا بیان باب: غصہ آئے تو کیا کہا جائے ؟ جناب بکر ( بکر بن عبداللہ ) سے روایت ہے کہ نبی کریم ﷺ نے سیدنا ابوذر ؓ کو ( کسی کام سے ) بھیجا اور یہ حدیث بیان کی ۔ امام ابوداؤد ؓ کہتے ہیں کہ یہ حدیث ( باوجود یہ کہ مرسل ہے ) صحیح تر ہے ۔ غصہ آجانے کی صورت میں آدمی کو چاہیئے کہ ہر طرح سے پر سکون رہنے کی کوشش کرےاور اپنی ہیت کو بدل لے۔اور وضو کرنا بہترین حل ہےجیسے کہ درج ذیل حدیث میں آرہا ہے۔