Book - حدیث 4474

كِتَابُ الْحُدُودِ بَابٌ فِي حَدِّ الْقَذْفِ حسن حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ الثَّقَفِيُّ وَمَالِكُ بْنُ عَبْدِ الْوَاحِدِ الْمِسْمَعِيُّ وَهَذَا حَدِيثُهُ أَنَّ ابْنَ أَبِي عَدِيٍّ حَدَّثَهُمْ، عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ إِسْحَاقَ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ أَبِي بَكْرٍ، عَنْ عَمْرَةَ، عَنْ عَائِشَةَ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهَا، قَالَتْ: لَمَّا نَزَلَ عُذْرِي, قَامَ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ عَلَى الْمِنْبَرِ، فَذَكَرَ ذَاكَ وَتَلَا- تَعْنِي: الْقُرْآنَ-، فَلَمَّا نَزَلَ مِنَ الْمِنْبَرِ, أَمَرَ بِالرَّجُلَيْنِ وَالْمَرْأَةِ فَضُرِبُوا حَدَّهُمْ.

ترجمہ Book - حدیث 4474

کتاب: حدود اور تعزیرات کا بیان باب: تہمت کی حد کا بیان ام المؤمنین سیدہ عائشہ ؓا بیان کرتی ہیں کہ جب میری برات کی آیات نازل ہوئیں تو نبی کریم ﷺ منبر پر کھڑے ہوئے اور اس واقعہ کا ذکر کیا اور قرآن کی آیات تلاوت فرمائیں ۔ جب منبر سے نیچے اترے تو آپ ﷺ نے دو مردوں اور ایک عورت کے متعلق حکم دیا اور انہیں حد لگائی گئی ۔ سیدہ عائشہ رضی اللہ عنہ کی براءت کا بیان سورہ نور کی ابتدا میں آیاہے۔