Book - حدیث 4393

كِتَابُ الْحُدُودِ بَابُ الْقَطْعِ فِي الْخُلْسَةِ وَالْخِيَانَةِ صحیح حَدَّثَنَا نَصْرُ بْنُ عَلِيٍّ، أَخْبَرَنَا عِيسَى ابْنُ يُونُسَ عَنِ ابْنِ جُرَيْجٍ، عَنْ أَبِي الزُّبَيْرِ، عَنْ جَابِرٍ، عَنِ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ... بِمِثْلِهِ، زَادَ: >وَلَا عَلَى الْمُخْتَلِسِ قَطْعٌ<. قَالَ أَبُو دَاوُد: هَذَانِ الْحَدِيثَانِ لَمْ يَسْمَعْهُمَا ابْنُ جُرَيْجٍ مِنْ أَبِي الزُّبَيْرِ وَبَلَغَنِي، عَنْ أَحْمَدَ بْنِ حَنْبَلٍ أَنَّهُ قَالَ إِنَّمَا سَمِعَهُمَا ابْنُ جُرَيْجٍ مَنْ يَاسِينَ الزَّيَّاتِ قَالَ أَبُو دَاوُد: وَقَدْ رَوَاهُمَا الْمُغِيرَةُ بْنُ مُسْلِمٍ، عَنْ أَبِي الزُّبَيْرِ، عَنْ جَابِرٍ عَنِ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ.

ترجمہ Book - حدیث 4393

کتاب: حدود اور تعزیرات کا بیان باب: اچک لینے اور خیانت میں ہاتھ کاٹنا سیدنا جابر ؓ نے نبی کریم ﷺ سے اسی حدیث کے مثل روایت کیا اور مزید کہا کہ اچکے کا ہاتھ نہیں کٹتا ۔ “ امام ابوداؤد ؓ فرماتے ہیں کہ یہ دونوں حدیثیں ابن جریج نے ابوزبیر سے نہیں سنیں ہیں ۔ اور مجھے امام احمد بن حنبل ؓ سے یہ بات پہنچی ہے ‘ انہوں نے کہا کہ یہ احادیث ابن جریج نے یاسین الزیات سے سنی ہیں ۔ امام ابوداؤد ؓ نے کہا : یہ احادیث مغیرہ بن مسلم نے بھی بواسطہ ابوزبیر ‘ جابر ؓ سے اور انہوں نے نبی کریم ﷺ سے روایت کی ہیں . لیٹرا وہ ہوتا ہے جو قوت یا اسلحہ کے طور پر مال چھین لے جائےاور اچکا وہ ہوتا ہے جو بڑی تیزی اور ہشیاری سےکسی کا مال لے اڑے اور خائن اسے کہتے ہیں جوحفاظت کےلئےدیے گئے مال سے انکاری ہوجائے۔ ان پر چوری کی تعریف ثابت نہیں ہوتی۔ چور وہ ہوتا ہے جو پوشیدہ چھپ کرخاص محفوظ مقام سے کسی غیر کا مال نکل جائے۔مذکورہ جرائم میں بلاشبہ دیگرسزائیں لازم آتی ہیں لیکن ہاتھ نہیں کٹتا۔