Book - حدیث 4248

كِتَابُ الْفِتَنِ وَالْمَلَاحِمِ بَابُ ذِكْرِ الْفِتَنِ وَدَلَائِلِهَا صحیح حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ، حَدَّثَنَا عِيسَى بْنُ يُونُسَ، حَدَّثَنَا الْأَعْمَشُ، عَنْ زَيْدِ بْنِ وَهْبٍ، عَنْ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ عَبْدِ رَبِّ الْكَعْبَةِ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عَمْرٍو، أَنَّ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ، قَالَ: >مَنْ بَايَعَ إِمَامًا فَأَعْطَاهُ صَفْقَةَ يَدِهِ وَثَمَرَةَ قَلْبِهِ, فَلْيُطِعْهُ مَا اسْتَطَاعَ، فَإِنْ جَاءَ آخَرُ يُنَازِعُهُ فَاضْرِبُوا رَقَبَةَ الْآخَرِ<. قُلْتُ: أَنْتَ سَمِعْتَ هَذَا مِنْ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ؟ قَالَ: سَمِعَتْهُ أُذُنَايَ، وَوَعَاهُ قَلْبِي، قُلْتُ: هَذَا ابْنُ عَمِّكَ مُعَاوِيَةُ يَأْمُرُنَا أَنْ نَفْعَلَ وَنَفْعَلَ! قَالَ: أَطِعْهُ فِي طَاعَةِ اللَّهِ، وَاعْصِهِ فِي مَعْصِيَةِ اللَّهِ.

ترجمہ Book - حدیث 4248

کتاب: فتنوں اور جنگوں کا بیان باب: فتنوں کا بیان اور ان کے دلائل سیدنا عبداللہ بن عمرو ؓ نے بیان کیا کہ نبی کریم ﷺ نے فرمایا ” جس شخص نے کسی امام کی بیعت کی ہو اور اپنے ہاتھ کا مال اور دل کا پھل ( اپنا قول و قرار ) اس کو دے دیا ہو تو پھر ہمت بھر اس کی اطاعت کرے ۔ اگر کوئی دوسرا ( امیر بن کر ) آئے اور اس سے جھگڑا کرے تو اس دوسرے کی گردن مار دو ۔ “ ( عبدالرحمٰن کہتے ہیں ) میں نے عبداللہ بن عمرو ؓ سے پوچھا کیا بھلا یہ حدیث آپ نے خود رسول اللہ ﷺ سے سنی ہے ؟ فرمایا ( کیوں نہیں ) اسے میرے کانوں نے سنا اور دل نے یاد رکھا ہے ۔ میں نے کہا : یہ آپ کے چچا زاد معاویہ ہمیں حکم دیتے ہے کہ یوں کریں اور یوں کریں ؟ کہا : اللہ کی اطاعت میں اس کی اطاعت کرو اور اللہ کی معصیت میں اس کی نافرمانی کرو ۔ امام المسلمین کی بیعت تا ئید اور اطاعت واجب ہے اور شرعی امور میں اس کی مخالفت حرام ہے۔ اللہ کی نا فرمانی میں کسی مخلوق کی کو ئی اطاعت نہیں۔