Book - حدیث 4222

كِتَابُ الْخَاتَمِ بَابُ مَا جَاءَ فِي خَاتَمِ الذَّهَبِ منکر حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ، حَدَّثَنَا الْمُعْتَمِرُ، قَالَ: سَمِعْتُ الرُّكَيْنَ بْنَ الرَّبِيعِ يُحَدِّثُ عَنِ الْقَاسِمِ بْنِ حَسَّانَ، عَنْ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ حَرْمَلَةَ أَنَّ ابْنَ مَسْعُودٍ، كَانَ يَقُولُ: كَانَ نَبِيُّ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَكْرَهُ عَشْرَ خِلَالٍ: الصُّفْرَةَ- يَعْنِي: الْخَلُوقَ-، وَتَغْيِيرَ الشَّيْبِ، وَجَرَّ الْإِزَارِ، وَالتَّخَتُّمَ بِالذَّهَبِ، وَالتَّبَرُّجَ بِالزِّينَةِ لِغَيْرِ مَحَلِّهَا، وَالضَّرْبَ بِالْكِعَابِ، وَالرُّقَى إِلَّا بِالْمُعَوِّذَاتِ، وَعَقْدَ التَّمَائِمِ، وَعَزْلَ الْمَاءِ لِغَيْرِ- أَوْ- غَيْرَ مَحَلِّهِ،- أَوْ- عَنْ مَحَلِّهِ، وَفَسَادَ الصَّبِيِّ غَيْرَ مُحَرِّمِهِ. قَالَ أَبُو دَاوُد: انْفَرَدَ بِإِسْنَادِ هَذَا الْحَدِيثِ أَهْلُ الْبَصْرَةِ وَاللَّهُ أَعْلَمُ.

ترجمہ Book - حدیث 4222

کتاب: انگوٹھیوں سے متعلق احکام و مسائل باب: سونے کی انگوٹھی کا بیان سیدنا عبداللہ بن مسعود ؓ بیان کیا کرتے تھے کہ نبی کریم ﷺ کو دس باتیں ناپسند تھیں ( حرام سمجھتے تھے ) زرد رنگ کی مرکب خوشبو یعنی خلوق ‘ سفید بالوں کا ( سیاہ ) رنگ تبدیل کر دینا ‘ چادر گھسیٹنا ‘ سونے کی انگوٹھی پہننا ‘ بغیر موقع مناسب کے زینت کا اظہار کرنا ‘ گوٹیوں سے کھیلنا ‘ شرعی معوذات کے سوا دوسرے دم جھاڑ ‘ منکے کوڈیاں وغیرہ لٹکانا ‘ غیر حلال میں منی ڈالنا اور چھوٹے بچے میں خرابی ڈالنا ‘ مگر آپ ﷺ اسے حرام نہ کہتے تھے ۔ ( مراد ہے ایام رضاعت میں بچے کی ماں سے مباشرت کرنا ) امام ابوداؤد ؓ فرماتے ہیں کہ اس حدیث کو مسند روایت کرنے میں اہل بصرہ منفرد ہیں ۔ «والله أعلم» مذکورہ باتوں سے بچنے کا اہتمام کرنا چاہیئے۔