Book - حدیث 3978

كِتَابُ الْحُرُوفِ وَالْقِرَاءَاتِ بَابٌ... حسن حَدَّثَنَا النُّفَيْلِيُّ حَدَّثَنَا زُهَيْرٌ حَدَّثَنَا فُضَيْلُ بْنُ مَرْزُوقٍ عَنْ عَطِيَّةَ بْنِ سَعْدٍ الْعَوْفِيِّ قَالَ قَرَأْتُ عَلَى عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عُمَرَ اللَّهُ الَّذِي خَلَقَكُمْ مِنْ ضَعْفٍ فَقَالَ مِنْ ضُعْفٍ قَرَأْتُهَا عَلَى رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ كَمَا قَرَأْتَهَا عَلَيَّ فَأَخَذَ عَلَيَّ كَمَا أَخَذْتُ عَلَيْكَ

ترجمہ Book - حدیث 3978

کتاب: قرآن کریم کی بابت لہجوں اور قراءتوں کا بیان باب:... عطیہ بن سعد عوفی کہتے ہیں کہ میں نے سیدنا عبداللہ بن عمر ؓ پر قرآت کی اور یوں پڑھا «الله الذي خلقكم من ضعف» ( ضاد پر فتحہ کے ساتھ ) تو انہوں نے فرمایا «من ضعف» پڑھو ۔ ( یعنی ضاد پر ضمہ ہے ) میں نے رسول اللہ ﷺ پر یہ آیت اسی طرح پڑھی تھی جیسے کہ تو نے مجھ پر پڑھی ہے تو آپ ﷺ نے میری گرفت فرمائی جیسے کہ میں نے تمہاری گرفت کی ہے ۔ قرآن مجید کے کلمات بلاشبہ عربی زبان کے ہیں اور ان کو ان کے کسی بھی لہجہ میں پڑھنا جائز ہے۔ مگر مطلوب وہی ہے جسے رسول اللہﷺ نے اختیار فرمایاہے۔