Book - حدیث 3147

كِتَابُ الْجَنَائِزِ بَابٌ كَيْفَ غُسْلُ الْمَيِّتِ صحیح حَدَّثَنَا هُدْبَةُ بْنُ خَالِدٍ حَدَّثَنَا هَمَّامٌ حَدَّثَنَا قَتَادَةُ عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ سِيرِينَ أَنَّهُ كَانَ يَأْخُذُ الْغُسْلَ عَنْ أُمِّ عَطِيَّةَ يَغْسِلُ بِالسِّدْرِ مَرَّتَيْنِ وَالثَّالِثَةَ بِالْمَاءِ وَالْكَافُورِ

ترجمہ Book - حدیث 3147

کتاب: جنازے کے احکام و مسائل باب: میت کو کیسے غسل دیا جائے ؟ جناب محمد بن سیرین ؓ غسل میت کی روایت سیدہ ام عطیہ ؓا سے بیان کیا کرتے تھے ۔ ( یا غسل میت کا طریقہ انہوں نے سیدہ ام عطیہ ؓا سے سیکھا تھا ) اور وہ میت کو دو بار بیری کے پانی سے نہلاتے اور تیسری بار کافور ملے پانی سے ۔ میت کوغسل دینے کا مسئلہ بہت ہی اہمیت رکھتا ہے۔لہذا علما ء کو چاہیے کہ طلباء اور جوانوں کو اورگھروں میں عورتوں کو بھی سکھایئں۔اور میت کو غسل دینا کوئی حقیر کام نہیں۔بلکہ ایک مسلمان کی عظیم خدمت اور بڑے اجروثواب کا کام ہے۔