Book - حدیث 292

كِتَابُ الطَّهَارَةِ بَابُ مَنْ رَوَى أَنَّ الْمُسْتَحَاضَةَ تَغْتَسِلُ لِكُلِّ صَلَاةٍ صحیح حَدَّثَنَا هَنَّادُ بْنُ السَّرِيِّ، عَنْ عَبْدَةَ عَنِ ابْنِ إِسْحَاقَ عَنِ الزُّهْرِيِّ، عَنْ عُرْوَةَ، عَنْ عَائِشَةَ، أَنَّ أُمَّ حَبِيبَةَ بِنْتَ جَحْشٍ اسْتُحِيضَتْ فِي عَهْدِ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ، فَأَمَرَهَا بِالْغُسْلِ لِكُلِّ صَلَاةٍ... وَسَاقَ الْحَدِيثَ. قَالَ أَبُو دَاوُد: وَرَوَاهُ أَبُو الْوَلِيدِ الطَّيَالِسِيُّ وَلَمْ أَسْمَعْهُ مِنْهُ، عَنْ سُلَيْمَانَ بْنِ كَثِيرٍ عَنِ الزُّهْرِيِّ، عَنْ عُرْوَةَ، عَنْ عَائِشَةَ، قَالَتِ: اسْتُحِيضَتْ زَيْنَبُ بِنْتُ جَحْشٍ، فَقَالَ لَهَا النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: >اغْتَسِلِي لِكُلِّ صَلَاةٍ<. وَسَاقَ الْحَدِيثَ. قَالَ أَبُو دَاوُد: وَرَوَاهُ عَبْدُ الصَّمَدِ، عَنْ سُلَيْمَانَ بْنِ كَثِيرٍ قَالَ: >تَوَضَّئِي لِكُلِّ صَلَاةٍ . قَالَ أَبُو دَاوُد: وَهَذَا وَهْمٌ مِنْ عَبْدِ الصَّمَدِ وَالْقَوْلُ فِيهِ قَوْلُ أَبِي الْوَلِيدِ.

ترجمہ Book - حدیث 292

کتاب: طہارت کے مسائل باب: وہ روایات جن میں ہے کہ مستحاضہ ہر نماز کے لئے غسل کرے ام المؤمنین سیدہ عائشہ ؓا کہتی ہیں کہ ام حبیبہ بنت حجش ؓا کو رسول اللہ ﷺ کے زمانے میں استحاضہ آتا رہا ، تو آپ ﷺ نے انہیں ہر نماز کے لیے غسل کرنے کا حکم دیا اور حدیث بیان کی ۔ امام ابوداؤد ؓ نے کہا : اسے ابوالولید طیالسی نے روایت کیا ہے ، مگر میں نے ان سے سنا نہیں ہے ( بلکہ بالواسطہ سنا ہے ) ( طیالسی نے ) سلیمان بن کثیر سے وہ زہری سے وہ عروہ سے وہ سیدہ عائشہ ؓا سے روایت کرتے ہیں ، کہا : زینب بنت حجش ؓا کو استحاضہ ہو گیا تو رسول اللہ ﷺ نے اس سے فرمایا ” ہر نماز کے لیے غسل کیا کرو ۔ “ اور حدیث بیان کی ۔ امام ابوداؤد ؓ نے کہا : اسے عبدالصمد نے سلیمان بن کثیر سے روایت کیا تو کہا : ” ہر نماز کے لیے وضو کیا کرو ۔ “ مگر عبدالصمد کا وہم ہے ۔ اس بارے میں ابوالولید کا قول صحیح ہے ۔ شیخ البانی رحمہ اللہ کا بیان ہے کہ ابو الولید طیالسی کی روایت میں صحیح تر یہ ہے کہ یہ خاتون ام حبیبہ بنت جحش تھیں۔