Book - حدیث 2605

كِتَابُ الْجِهَادِ بَابٌ فِي أَيِّ يَوْمٍ يُسْتَحَبُّ السَّفَرُ صحیح حَدَّثَنَا سَعِيدُ بْنُ مَنْصُورٍ، حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ الْمُبَارَكِ، عَنْ يُونُسَ بْنِ يَزِيدَ عَنِ الزُّهْرِيِّ، عَنْ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ كَعْبِ ابْنِ مَالِكٍ، عَنْ كَعْبِ بْنِ مَالِكٍ قَالَ: قَلَّمَا كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَخْرُجُ فِي سَفَرٍ إِلَّا يَوْمَ الْخَمِيسِ.

ترجمہ Book - حدیث 2605

کتاب: جہاد کے مسائل باب: کون سے دن سفر کرنا مستحب ہے ؟ سیدنا کعب بن مالک ؓ سے مروی ہے انہوں نے کہا کہ بہت کم ایسے ہوتا کہ رسول اللہ ﷺ جمعرات کے علاوہ کسی اور دن سفر کے لیے نکلتے ۔ دن سب اللہ کے ہیں مگر جمعرات کو اہمیت حاصل ہےکہ اس روز اللہ کے حضور اعمال پیش ہوتے ہیں۔