Book - حدیث 2556

كِتَابُ الْجِهَادِ بَابٌ فِي تَعْلِيقِ الْأَجْرَاسِ صحیح حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ رَافِعٍ، حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أُوَيْسٍ، حَدَّثَنِي سُلَيْمَانُ بْنُ بِلَالٍ عَنِ الْعَلَاءِ بْنِ عَبْدِ الرَّحْمَنِ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، أَنَّ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ فِي الْجَرَسِ: >مِزْمَارُ الشَّيْطَانِ<.

ترجمہ Book - حدیث 2556

کتاب: جہاد کے مسائل باب: جانوروں کو گھنٹیاں باندھنے کا مسئلہ سیدنا ابوہریرہ ؓ نے بیان کیا کہ رسول اللہ ﷺ نے گھنٹی کے متعلق فرمایا ” یہ شیطان کا باجا ہے ۔ “ 1۔جانوروں کے گلے میں گھنٹیاں اور گھنگرو قسم کی چیزیں باندھناجائز نہیں۔2۔موسیقی کے دوسرے آلات کی حرمت بھی احادیث سے ثابت ہے۔3۔ایسے ہی کتارکھنااگر محض اظہار ہیبت اور زینت کےلئے ہوتو ناجائز ہے۔حفاظت کی نیت سے ہو تو جائز ہے۔