Book - حدیث 2539

كِتَابُ الْجِهَادِ بَابٌ فِي الرَّجُلِ يَمُوتُ بِسِلَاحِهِ ضعیف حَدَّثَنَا هِشَامُ بْنُ خَالِدٍ الدِّمَشْقِيُّ، حَدَّثَنَا الْوَلِيدُ، عَنْ مُعَاوِيَةَ بْنِ أَبِي سَلَّامٍ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ جَدِّهِ أَبِي سَلَّامٍ، عَنْ رَجُلٍ مِنْ أَصْحَابِ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ، قَالَ: أَغَرْنَا عَلَى حَيٍّ مِنْ جُهَيْنَةَ، فَطَلَبَ رَجُلٌ مِنَ الْمُسْلِمِينَ رَجُلًا مِنْهُمْ، فَضَرَبَهُ فَأَخْطَأَهُ، وَأَصَابَ نَفْسَهُ بِالسَّيْفِ، فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: >أَخُوكُمْ يَا مَعْشَرَ الْمُسْلِمِينَ!<، فَابْتَدَرَهُ النَّاسُ فَوَجَدُوهُ قَدْ مَاتَ، فَلَفَّهُ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ بِثِيَابِهِ، وَدِمَائِهِ، وَصَلَّى عَلَيْهِ وَدَفَنَهُ. فَقَالُوا: يَا رَسُولَ اللَّهِ! أَشَهِيدٌ هُوَ؟ قَالَ: >نَعَمْ، وَأَنَا لَهُ شَهِيدٌ<.

ترجمہ Book - حدیث 2539

کتاب: جہاد کے مسائل باب: جو شخص اپنا ہی ہتھیار لگنے سے فوت ہو جائے جناب ابو سلام ، نبی کریم ﷺ کے ایک صحابی سے روایت کرتے ہیں ‘ انہوں نے بیان کیا کہ ہم نے جہینہ کے ایک قبیلے پر حملہ کیا ۔ پس مسلمانوں میں سے ایک آدمی نے ان کے ایک آدمی پر وار کیا اور اسے مارنا چاہا مگر اس کا وار خطا گیا اور اس کی تلوار خود اسے ہی لگ گئی تو رسول اللہ ﷺ نے فرمایا ’’ اے مسلمانو ! تمہارا بھائی ! ( اس کی خبر لو ) ۔ ‘‘ لوگ بھاگ کر اس کی طرف گئے تو دیکھا کہ وہ فوت ہو چکا ہے ‘ رسول اللہ ﷺ نے اس کو اسی کے کپڑوں میں خون سمیت لپیٹ دیا ‘ اس کی نماز جنازہ پڑھی اور اسے دفن کر دیا ۔ لوگوں نے پوچھا ۔ اے اللہ کے رسول ! کیا وہ شہید ہے ؟ آپ ﷺ نے فرمایا ’’ ہاں اور میں اس کے لیے گواہ ہوں ۔ ‘‘