Book - حدیث 1881

كِتَابُ الْمَنَاسِكِ بَابُ الطَّوَافِ الْوَاجِبِ ضعیف حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ حَدَّثَنَا خَالِدُ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ حَدَّثَنَا يَزِيدُ بْنُ أَبِي زِيَادٍ عَنْ عِكْرِمَةَ عَنْ ابْنِ عَبَّاسٍ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَدِمَ مَكَّةَ وَهُوَ يَشْتَكِي فَطَافَ عَلَى رَاحِلَتِهِ كُلَّمَا أَتَى عَلَى الرُّكْنِ اسْتَلَمَ الرُّكْنَ بِمِحْجَنٍ فَلَمَّا فَرَغَ مِنْ طَوَافِهِ أَنَاخَ فَصَلَّى رَكْعَتَيْنِ

ترجمہ Book - حدیث 1881

کتاب: اعمال حج اور اس کے احکام و مسائل باب: طواف واجب کا بیان سیدنا ابن عباس ؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ مکہ مکرمہ تشریف لائے تو آپ ﷺ کی طبیعت ناساز تھی چنانچہ آپ ﷺ نے اپنی سواری پر ( سوار ہو کر ) طواف کیا ۔ آپ ﷺ جب بھی حجر اسود کے پاس آتے تو اپنے عصا سے اس کو مس کرتے ۔ پس جب آپ ﷺ اپنے طواف سے فارغ ہو گئے تو آپ ﷺ نے ( اپنی اونٹنی کو ) بٹھا دیا اور دو رکعتیں ادا کیں ۔