Book - حدیث 1421

كِتَابُ تَفريع أَبوَاب الوِترِ بَابٌ كَمْ الْوِتْرُ صحیح حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ كَثِيرٍ أَخْبَرَنَا هَمَّامٌ عَنْ قَتَادَةَ عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ شَقِيقٍ عَنْ ابْنِ عُمَرَ أَنَّ رَجُلًا مِنْ أَهْلِ الْبَادِيَةِ سَأَلَ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ عَنْ صَلَاةِ اللَّيْلِ فَقَالَ بِأُصْبُعَيْهِ هَكَذَا مَثْنَى مَثْنَى وَالْوِتْرُ رَكْعَةٌ مِنْ آخِرِ اللَّيْلِ

ترجمہ Book - حدیث 1421

کتاب: وتر کے فروعی احکام و مسائل باب: وتر میں کتنی رکعات ہیں سیدنا ابن عمر ؓ سے مروی ہے کہ ایک دیہاتی آدمی نے نبی کریم ﷺ سے رات کی نماز کے بارے میں پوچھا تو آپ ﷺ نے اپنی انگلیوں سے اشارہ کرتے ہوئے فرمایا : ” اس طرح دو دو رکعت ۔ اور وتر ایک رکعت ہے رات کے آخر میں ۔ “