Book - حدیث 1143

کِتَابُ تَفْرِيعِ أَبْوَابِ الْجُمُعَةِ بَابُ الْخُطْبَةِ يَوْمَ الْعِيدِ صحیح حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ وَأَبُو مَعْمَرٍ عَبْدُ اللَّهِ بْنُ عَمْرٍو، قَالَا: حَدَّثَنَا عَبْدُ الْوَارِثِ، عَنْ أَيُّوبَ، عَنْ عَطَاءٍ عَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ.... بِمَعْنَاهُ. قَالَ: فَظَنَّ أَنَّهُ لَمْ يُسْمِعِ النِّسَاءَ، فَمَشَى إِلَيْهِنَّ، وَبِلَالٌ مَعَهُ، فَوَعَظَهُنَّ، وَأَمَرَهُنَّ بِالصَّدَقَةِ، فَكَانَتِ الْمَرْأَةُ تُلْقِي الْقُرْطَ وَالْخَاتَمَ فِي ثَوْبِ بِلَالٍ.

ترجمہ Book - حدیث 1143

کتاب: جمعۃ المبارک کے احکام ومسائل باب: عید کے روز خطبہ ایوب نے عطاء سے انہوں نے سیدنا ابن عباس ؓ سے مذکورہ بالا حدیث کے ہم معنی بیان کیا ۔ ابن عباس ؓ کہتے ہیں کہ آپ کو خیال ہوا کہ عورتوں نے ( آپ کا خطبہ ) نہیں سنا ہے تو آپ ان کی طرف چلے اور بلال ؓ آپ ﷺ کے ساتھ تھے ۔ آپ ﷺ نے انہیں وعظ فرمایا اور صدقہ کرنے کا حکم دیا ، تو کوئی بلال ؓ کے کپڑے میں اپنی بالی ڈال رہی تھی تو کوئی اپنی انگوٹھی ۔