کتاب: تلاش حق کا سفر - صفحہ 155
اکیلے پڑھیں، امام کے پیچھے پڑھیں یا امامت کرائیں سورۃ فاتحہ لازمی پڑھنا ہے ۔ نماز جنازہ میں سورۃ فاتحہ لازمی ہے لیکن آپ کا کیا حال ہے ؟ آپ کو کیا بتایا گیا ہے ؟ جب سورۃ فاتحہ کے بغیر نماز نہیں ہوتی تو آپ کی اب تک کی نمازوں کا کیا ہوگا؟ غور سے سوچیں۔ طریقۂ وتر جو ثابت ہے وہ دورکعت اور ایک رکعت الگ الگ جیسے حرمین شریفین میں پڑھی جاتی ہے اور دوسرا طریقہ ہے تینوں رکعتیںایک تشہد کے ساتھ۔آپ جو وتر مغرب کی نماز کی طرح پڑھ رہے ہیں وہ حدیث کی کتابوں سے ثابت ہی نہیں ہے ۔ (۶) گھر پر بچوں کا خیال رکھیں۔ ان میں دینی تعلیم کا شعور پیدا کریں۔ اور اُنکو ساتھ لیکر خود بھی حدیث کی کتابوں کا مُطالعہ کریں۔ دو چار جتنی بھی ہوسکے احادیث پڑھ کر سنائیں اور بچوں میں پڑھ کر سُنانے کی عادت ڈالیں۔ آپکے گھر کی لائبریری میں جتنی بھی کتا بیں چا ہیں وہ بھی میں مہیا کرونگا۔ اس کی فکر نہ کریں۔ (۷) بچوں کا ماحول اچھا رکھیں ۔ جب تک یہ اچھی طرح سے دینی معلومات حاصل نہیں کرلیتے اور آپ بھی جب تک اس قابل نہیں ہوجاتے اُس وقت تک تبلیغ میں جانابند کریں۔ اور بچوں کا وقت بھی برباد نہ کریں۔بے عقل اور اَن پڑھ آدمی تبلیغ کیسے کرسکتا ہے ؟ یہ کہاں کی عقلمندی ہے ؟ اس لیے فی الوقت اس سلسلے کو بند کریں۔ میں بھی کچھ سیکھنے کی کوشش کررہا ہوں۔ آپ بھی سیکھیں۔ (۸) صرف میٹھی میٹھی سنتوں کو اپنانے کی عادت چھوڑدیں ۔ جمعرات اور پیر کو نفل روزے رکھنے کی عادت ڈالیں اور ساتھ ہی ساتھ ا یام بیض کے روزے بھی رکھا کریں۔ یعنی چاند کی ۱۳، ۱۴ اور ۱۵ تاریخ کو۔ یہ سارے روزے نبی صلی اللہ علیہ وسلم زندگی بھر رکھا کرتے تھے ۔ خود بھی رکھیں اور گھر والوں کو بھی تاکید کریں۔ اگر آپ لوگ اس سُنت پر عمل کرنا شروع کردینگے تو وہ تمام ساتھی جو آپ سے ملتے ہیں ہوسکتا ہے وہ بھی اس سُنت پر عمل پیرا ہوجائیں۔ اُنکو بھی بتاتے رہیں ۔ پتہ