کتاب: تخریج وتحقیق کے اصول وضوابط - صفحہ 91
پہلااشکال: بعض لوگ ضعیف + ضعیف کے اصول اور جمع تفریق کے ذریعے سے بعض روایات کو حسن لغیرہ قرار دیتے ہیں۔ جواب: حسن لغیرہ کو ماننے والے جمہور علما ء ہیں نہ کہ بعض لوگ، چنانچہ ذیل میں ہم ان علما ء و محدثین کی طرف اشارہ کرتے ہیں: 1۔ امام ترمذی امام ترمذی کے علاوہ عام محدثین سے ایسی حسن لغیرہ روایت کا حجت ہونا ثابت نہیں۔ (علمی مقالات 1/ 300) معلوم ہوا کہ امام ترمذی حسن لغیرہ کو حجت سمجھتے ہیں۔والحمدللّٰه 2۔ امام بیہقی (معرفہ السنن والآثار 1/ 348، نصب الرایہ 1/ 93) 3۔ نووی (اربعین نووی حدیث نمبر32) 4۔ ابن الصلاح (مقدمۃ علوم الحدیث صفحہ 37) 5۔ امام ابن قطان (النکت علیٰ ابن الصلاح لابن حجر: صفحہ 126، طبع دار الکتب العلمیہ بیروت) 6۔ ابن رجب حنبلی (جامع العلوم والحکم صفحہ ۳۰۰) 7۔ ابن تیمیہ (مجموع الفتاوی 1/ 251) 8۔ ابن قیم (جلاء الافہام صفحہ 199)