کتاب: تفسیر النساء - صفحہ 849
دے دئیے لیکن ان واقعات کی تصدیق کسی مصدقہ ذریعے سے نہیں ہو سکی۔ اسی طرح مکڑی مارنے سے منع کرنے کے بارے میں بھی کوئی ہدایت اور حکم موجود نہیں ہے اس لیے مکڑیوں کو مارنا قطعی جائز ہے۔[1] تلاوت قرآن کے فوائد سوال : تلاوت قرآن کے کیا فوائد ہیں ؟ جواب : (۱) اس سے دل میں صبر و برداشت کی قوت پیدا ہوتی ہے۔ (۲)اجر ملتا ہے۔ (۳)اس میں غور کرنے سے معارف وحقائق منکشف ہوتے ہیں ۔ (۴)سننے والوں کو اس کی برکات سے فیض ملتا ہے۔ (۵)دعوت واصلاح کو بنیاد ملتی ہے۔[2] دوسروں سے بحث کرنا سوال : دوسروں سے بحث کیسے کرنی چاہیے؟ جواب : ﴿وَ لَا تُجَادِلُوْٓا اَہْلَ الْکِتٰبِ اِلَّا بِالَّتِیْ ہِیَ اَحْسَنُ…﴾ (العنکبوت: ۴۶) ’’اور اہل کتاب سے احسن انداز میں بحث و تکرار کرو۔‘‘ اس آیت میں اللہ تعالیٰ نے بحث کا انداز خود ہی سمجھا دیا یعنی جن جن باتوں میں فریقین میں موافقت ومطابقت پائی جاتی ہے پہلے ان کا ذکر کر کے انہیں اپنی طرف مائل کیا جائے یہ نہ ہونا چاہیے کہ ابتداء میں اختلافی امور کو زیر بحث لا کر فریق مخالف کو اپنا مزید مخالف بنا لیا جائے یعنی زبان شیریں اور انداز گفتگو ایسا ناصحانہ ہونا چاہیے جس سے وہ چڑ جانے کی بجائے بات کو تسلیم کر لینے پر آمادہ ہو جائے۔[3] قوم پرستی یا وطن پرستی کا کیا حکم ہے ؟ سوال : قوم پرستی یا وطن پرستی کا کیا حکم ہے نیز ہجرت کس لیے ہونی چاہیے؟ جواب : قرآن میں ہے: ﴿یٰعِبَادِیَ الَّذِیْنَ اٰمَنُوْٓا اِنَّ اَرْضِیْ وَاسِعَۃٌ فَاِیَّایَ فَاعْبُدُوْنِo﴾ (العنکبوت: ۵۶) ’’اے میری بندو! جو ایمان لائے ہو بلا شبہ میری سر زمین وسیع ہے سو مجھی کی عبادت کرو۔‘‘ یہ ہجرت کی طرف اشارہ ہے، مطلب یہ ہے کہ اگر مکے میں خدا کی بندگی کرنا مشکل ہو گیا ہے تو ملک چھوڑ کر نکل جاؤ اللہ کی زمین تنگ نہیں ہے۔ یہ آیت اس باب میں بالکل صریح ہے کہ ایک سچا خدا پرست انسان محب قوم و وطن تو ہو سکتا ہے مگر قوم پرست اور وطن پرست نہیں ہو سکتا اس کے لیے خدا کی بندگی ہر چیز [1] اسلامی طرز فکر: ۱/ ۴۵۸۔ [2] تفصیل کے لیے تفسیر ملاحظہ کیجئے: العنکبوت: ۴۵۔ [3] تیسیر القرآن: ۳/ ۴۸۷۔