کتاب: صحیح دعائیں اور اذکار - صفحہ 133
پھرتا ہے، اسی مناسبت سے فضل ذکر کیا گیا۔ فوائدِحدیث : ٭ ہر دعا اور ذکر کے وقت پیغمبر صلی اللہ علیہ وسلم پر درود وسلام پڑھنے کی اہمیت۔ ٭ اللہ تعالیٰ کی بارگاہ میں التجاء و گریہ زاری۔ ٭ اللہ تعالیٰ سے رحمت اور مغفرت کی طلب۔ ٭ دنیا و آخرت میں اللہ تعالیٰ سے فضل و کرم کا سوال۔ اذان سننے کے وقت کی دعائیں حضرت عمر بن خطاب رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: ((إذا قالَ المُؤَذِّنُ: اللّٰهُ أكْبَرُ اللّٰهُ أكْبَرُ، فقالَ أحَدُكُمْ: اللّٰهُ أكْبَرُ اللّٰهُ أكْبَرُ، ثُمَّ قالَ: أشْهَدُ أنْ لا إلَهَ إلّا اللَّهُ، قالَ: أشْهَدُ أنْ لا إلَهَ إلّا اللَّهُ، ثُمَّ قالَ: أشْهَدُ أنَّ مُحَمَّدًا رَسولُ اللّٰهِ قالَ: أشْهَدُ أنَّ مُحَمَّدًا رَسولُ اللهِ، ثُمَّ قالَ: حَيَّ على الصَّلاةِ، قالَ: لا حَوْلَ ولا قُوَّةَ إلّا باللَّهِ، ثُمَّ قالَ: حَيَّ على الفَلاحِ، قالَ: لا حَوْلَ ولا قُوَّةَ إلّا باللَّهِ، ثُمَّ قالَ: اللّٰهُ أكْبَرُ اللّٰهُ أكْبَرُ، قالَ: اللّٰهُ أكْبَرُ اللّٰهُ أكْبَرُ، ثُمَّ قالَ: لا إلَهَ إلّا اللَّهُ، قالَ: لا إلَهَ إلّا اللّٰهُ مِن قَلْبِهِ دَخَلَ الجَنَّةَ)) [1] ’’جب موذن اَللّٰہُ اَکْبَرُ اَللّٰہُ اَکْبَرُ، کہے؛ تو تم میں سے کوئی ایک اَللّٰہُ اَکْبَرُ اَللّٰہُ اَکْبَرُ،کہے۔ پھر مؤذن اَشْہَدُ اَنْ لَّا اِلٰہَ اِلَّا اللّٰہُ ،کہے تو یہ بھی [1] صحیح مسلم، ح: ۸۴۵۔