کتاب: رُشدقرأت نمبر 2 - صفحہ 914
ہوئے اتنے فاضلانہ مقالات کا یکجا منظر عام پر لانا واقعتاً ایک کارنامہ ہے جومادی ترقی کے اس دور میں قرآن اور علوم القرآن سے گہری وابستگی کابین ثبوت ہے۔مذکورہ شمارے کے حصّہ دوم کاانتظاررہے گا۔اللہ تعالیٰ آپ کو خدمت دین کی مزید توفیق سے نوازے۔ ڈاکٹر محمد حمادلکھوی ایڈیٹر مجلہ ’القلم‘ شعبہ علوم اِسلامیہ، جامعہ پنجاب لاہور ٭٭٭ محترم المقام حافظ عبد الرحمن مدنی صاحب السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ! اُمید ہے آپ بخیریت ہوں گے۔ ’سبعہ احرف‘ پر ماہنامہ ’رُشد‘ کی سات سو سے زیادہ صفحات پرمبنی پہلی جلد میری نگاہ سے گزری۔ یہ محض قابل تعریف نہیں بلکہ عظیم الشان کارنامہ ہے، جو ’رُشد‘ کے جواں سال ایڈیٹرز حافظ انس مدنی، حافظ حمزہ مدنی(جو کہ خود بھی سبعہ قراءت کے معروف قاری ہیں ) اور ان کی ٹیم نے انجام دیا ہے۔ سچی بات یہ ہے کہ ایسا اَدق تحقیقی اور تالیفی کام اس طرح کے جذبے سے سرشار نوجوان ہی کرسکتے ہیں ۔ مجھے افسوس ہے کہ میں ماہنامہ ’رُشد‘کی اس خصوصی اشاعت پر تفصیلی اظہار خیال نہیں کرسکا ہوں ۔یہ بتوفیق ایزدی مجھ پر قرض ہے۔ فی الحال میں ماہنامہ ’رُشد‘ کے مدیران کوہدیۂ تبریک اور خراج تحسین پیش کرنے پر ہی اکتفا کرتاہوں ۔ محمد عطاء اللہ صدیقی ٭٭٭ قرآن حکیم اللہ کا کلام اور اس کی صفت ہے جوسات کافی وشافی حروف کی صورت میں حامل وحی حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کے قلب اطہرپراتاراگیایہ ساتوں قراءات صحیح ،قطعی ، اورمتواتراَحادیث سے ثابت شدہ ہیں ۔صحیح حدیث أنزل القرآن علی سبعۃ أحرف۔۔۔۔ الخ کی تائید وتوثیق میں ساڑھے سات سوروایات موجود ہیں ۔ یہی وجہ ہے کہ اُمت مسلمہ کا اس بات پر اجماع منقول ہے کہ شریعت طاہرہ میں صحابہ کرام رضی اللہ عنہم اورقیامت تک آنے والی اُمت کی آسانی کی غرض سے انہیں کئی لغات (اورلہجات) پر قرآن مجید پڑھنے کی اجازت دی گئی ہے اوراللہ عزوجل کا یہ فرمان اس حقیقت پردال ہے ﴿وَلَقَدْ یَسَّرْنَا الْقُرْآنَ لِلذِّکْرِ۔۔۔۔۔الایۃ﴾(سورۃالقمر)آیت کریمہ میں تیسر پڑھنے پڑھانے ،سیکھنے سکھلانے اورعمل کرنے جیسے ہرچیز کوشامل ہے ۔ مگر افسوس!مخالفین دین واسلام خواہ وہ غیرمسلم ہوں یااسلامی لبادہ اوڑھنے والے دشمنان دین کے نمائندگان، یاپھر وہ ظاہری طور پر مذہبی ودینی پیشوا ہوں ، اسلام کاحقیقی چہرہ مسخ کرنے کی جستجومیں انہیں قرآن حکیم کے انکار کی جرأت تونہ ہوئی،لے دے کے اوربڑی کوشش کے بعد قراءات کے انکار کی صورت میں اس کو نقب لگانے کی سعی لاحاصل کی ۔مگریہ ان کی ہمیشہ کی طرح حسرت ہی رہے گی کہ نور الٰہی ہے کفر کی حرکت پہ خندہ زن !! پھونکوں سے یہ چراغ بجھایا نہ جائے گا