کتاب: مختصر فقہ الصلاۃ نماز نبوی - صفحہ 347
عَلٰی (اِبْرَاہِیْمَ وَعَلٰی) آلِ اِبْرَاہِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ، اَللّٰہُمَّ بَارِکْ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰی آلِ مُحَمَّدٍ کَمَا بَارَکْتَ عَلٰی (اِبْرَاہِیْمَ وَعَلٰی) آلِ اِبْرَاہِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ )) [1] ’’اے اللہ ! ہمارے نبی محمد ( صلی اللہ علیہ وسلم ) پر درود بھیج اور آپ ( صلی اللہ علیہ وسلم ) کی آل پر بھی، جس طرح کہ تو نے ابراہیم (u) اور ان کی آل پر درود بھیجا، یقینا تو تمام تعریفوں والا اور صاحبِ مجد و ثنا ہے۔ اے اللہ! ہمارے نبی محمد ( صلی اللہ علیہ وسلم ) پر اور آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی آل پر برکتیں نازل فرما، جس طرح کہ تو نے ابراہیم (u) اور ان کی آل پر برکتیں نازل کیں، یقینا تو صاحبِ حمد و مجد ہے۔‘‘ دوسرا صیغہ: سنن نسائی، مسند احمد اور مسند ابی یعلیٰ میںصرف درمیان والے دو ایک الفاظ کے فرق سے یہ صیغہ حضرت طلحہ رضی اللہ عنہ سے یوں وارد ہوا ہے: (( اَللّٰہُمَّ صَلِّ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰی آلِ مُحَمَّدٍ کَمَا صَلَّیْتَ عَلٰی اِبْرَاہِیْمَ (وَآلِ اِبْرَاہِیْمَ) اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ، وَبَارِکْ عَلٰی مُحَمَّدٍ وَّعَلٰی آلِ مُحَمَّدٍ کَمَا بَارَکْتَ عَلٰی (اِبْرَاہِیْمَ وَ) آلِ اِبْرَاہِیْمَ اِنَّکَ حَمِیْدٌ مَّجِیْدٌ )) [2] ’’اے اللہ! ہمارے نبی محمد ( صلی اللہ علیہ وسلم ) پر درود بھیج اور آپ ( صلی اللہ علیہ وسلم ) کی آل پر بھی، جس طرح کہ تو نے ابراہیم (u) اور ان کی آل پر درود بھیجا، یقینا تو تمام تعریفوں والا اور صاحبِ مجد و ثنا ہے اور (اے اللہ!) ہمارے [1] للتفصیل: فقہ الصلاۃ (۳/ ۶۵۷ تا ۶۶۲)