کتاب: مولانا محمد اسماعیل سلفی رحمہ اللہ - صفحہ 161
یہ کتابیں تقریباً دس ہزار صفحات پر محتوی ہیں اور’’ثقافت‘‘ اور ’’المعارف‘‘دو ماہناموں کے مضامین اس سے الگ ہیں۔ ادارہ ثقافت اسلامیہ سے الگ ہونے کے بعد میں نے حسب ذیل کتابیں لکھیں۔ (1) نقوش عظمت رفتہ : انیس علماء و زعما کے واقعات(ساڑھےچھے سو صفحات) (2) بزمِ ارجمنداں : اس میں اکیس اہل علم کے حالات بیان کیے گئے ہیں۔ (چھے سو صفحات) (3) کاروان سلف : بائیس اصحاب علم کے کوائف حیات پر مشتمل (پانچ سو سے زائد صفحات) (4) حضرت ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ : محمد حسین ہیکل کی کتاب کا ترجمہ (چھے سو سے زائد صفحات) (5) قصوری خاندان : مولانا عبدالقادر قصوری، مولانا محی الدین احمد قصوری اور مولانا محمد علی قصوری وغیرہ بزرگانِ عالی قدر کے حالات۔ (6) اسلام کی بیٹیاں : مختلف ادوار اور مختلف ممالک کی خواتین کا تذکرہ۔ (7) قافلہ حدیث : زیر طبع(پانچ سو سے زائد صفحات) (8) لسان القرآن : قرآن کا توضیحی لغت(تیسری جلد) پہلی اور دوسری(دو جلدیں) مولانا محمد حنیف ندوی نے لکھیں۔ (9) چہرہ نبوت قرآن کے آئینے میں : کچھ حصہ مولانا محمد حنیف ندوی نے لکھا اور کچھ حصہ میں نے مکمل کیا۔ (10) میاں فضل حق کی خدمات : اس میں برصغیر کی جماعت اہل حدیث کی تاریخ سے متعلق بہت سا مواد آگیا ہے۔ (11) برصغیر کی تحریک آزادی کے سو سال : میاں عبدالعزیز بار ایٹ لاء کے حالات (ساڑھے پانچ سو صفحات) (12) برصغیر میں اہل حدیث : جلد اول مکمل، دوسری جلد زیر ترتیب۔ (13) محفل دانش منداں : زیر ترتیب اگر میری تمام مطبوعہ تحریریں جمع کی جائیں تو زیر مطالعہ کتاب کے سائز کے پینتیس ہزار