کتاب: مسنون ذکر الٰہی، دعائیں - صفحہ 324
(( اَللّٰھُمَّ اِنِّیْ اَعُوْذُ بِکَ مِنَ الْعَجْزِ وَالْکَسَلِ وَالْبُخْلِ وَالْھَرَمِ وَعَذَابِ الْقَبْرِ وَفِتْنَۃِ الدَّجَّالِ، اَللّٰھُمَّ اٰتِ نَفْسِیْ تَقْوَاھَا وَزَکِّھَا اَنْتَ خَیْرُ مَنْ زَکَّاھَا اَنْتَ وَلِیُّھَا وَمَوْلَاھَا اَللّٰھُمَّ اِنِّیْ اَعُوْذُ بِکَ مِنْ عِلْمٍ لَا یَنْفَعُ وَمِنْ قَلْبِِ لَا یَخْشَعُ وَمِنْ نَفْسٍ لَاتَشْبَعُ وَمِنْ دَعَوْۃٍ لَا یُسْتَجَابُ لَھَا )) [1] ’’اے اللہ! میں تیری پناہ مانگتا ہوں بے بسی، کاہلی و سُستی، بُزدلی، بخل، شدید بڑھاپے، عذابِ قبر اور فتنۂ دجّال سے، اے اللہ! میرے نفس کو تقویٰ عطافرما اور اس کا تزکیہ فرما اور تو ہی بہترین تزکیہ کرنے والا ہے، تو ہی اِس کا آقا و دوست ہے، اے اللہ! میں تیری پناہ مانگتا ہوں:بے فائدہ علم، بے خشوع دِل، سیر نہ ہونے والے نفس اور اُس دُعا سے جو قبول نہ ہو۔‘‘ [1] صحیح مسلم، سنن النسائي، مسند أحمد، صحیح الجامع، رقم الحدیث (۱۲۹۷)