کتاب: مسنون ذکر الٰہی، دعائیں - صفحہ 256
دورانِ سجدہ اونٹ کی گندی اوجڑی ڈال دی تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے ان کے لیے یوں بد دُعا فرمائی: (( اَللّٰھُمَّ عَلَیْکَ بِقُرَیْشٍ اَللّٰھُمَّ عَلَیْکَ بِقُرَیْشٍ، اَللّٰھُمَّ عَلَیْکَ بِقُرَیْشٍ اَللّٰھُمَّ عَلَیْکَ بِاَبِیْ جَھْلٍ وَعُتْبَۃَ وَرَبِیْعَۃَ اَللّٰھُمَّ عَلَیْکَ بِاَبِیْ جَھْلِِ وَعُتْبَۃَ وَرَبِیْعَۃَ اَللّٰھُمَّ عَلَیْکَ بِاَبِیْ جَھْلٍ وَعُتْبَۃَ وَرَبِیْعَۃَ )) [1] ’’اے اللہ! مشرکینِ قریش سے تو ہی نپٹ۔ اے اللہ! مشرکینِ قریش کو تو ہی سنبھال۔ اے اللہ! مشرکینِ قریش کو تو ہی لے۔ اے اللہ! ابو جہل، عتبہ اور ربیعہ سے تو ہی نپٹ۔ اے اللہ! ان کو تو ہی سنبھال، اے اللہ! ان کو تو ہی لے۔‘‘ 5 ۔قبیلۂ بنی مضر کے خلاف یوں بد دعا فرمائی تھی: (( اَللّٰھُمَّ اشْدُدْ وَطْأَتَکَ عَلٰی مُضَرٍ اَللّٰھُمَّ اجْعَلْھَا [1] صحیح البخاري، رقم الحدیث (۲۳۷) صحیح مسلم، رقم الحدیث (۱۷۹۴)