کتاب: مقالات توحید - صفحہ 158
وجہ سے ؛ اور اگرتیرے رب کی طرف سے ایک مقر ر وقت تک کی بات نہ ہوتی جوپہلے طے ہو چکی ہے تو ضرور ان کے درمیان فیصلہ کر دیا جاتا اوربیشک جو لوگ ان کے بعد کتاب کے وارث بنائے گئے وہ اس کے متعلق یقینا ایسے شک میں مبتلا ہیں جو بے چین رکھنے والا ہے۔‘‘ پھر ایسے لوگوں کی سزا بیان کرتے ہوئے فرمایا: ﴿ سَاُصْلِیْہِ سَقَرَ ﴾ [المدثر26] ’’میں اسے جلد ہی سقر (جہنم) میں داخل کروں گا۔‘‘ ٭٭٭