کتاب: خطبات حرمین جلد اول - صفحہ 514
ٹھنڈک نصیب ہوتی ہے اور باطل پرست اور خود غرض افراد کی راہ بند ہوگئی ہے تاکہ اس تلاطم خیز دنیا کے سمندر میں معاشرے کا سفینہ امن کے ساتھ اپنا سفر جاری رکھ سکے۔ یہ اﷲ تعالیٰ کے فضل اور اس سفینے کے ماہر ملاحوں کا کارنامہ ہے جنھوں نے بہترین انداز میں قیادت کی اور کمال کی عمارت تعمیر کی۔ امت کی دعائیں ان کے ساتھ ہیں کہ وہ بتوفیق الٰہی درست راستے پر چلتے رہیں اور اﷲ اس امت سے غموں کے بادل دور کرے۔ یہ سب کچھ پھولوں کی سیج اور خوش کن خوابوں کے ذریعے نہیں بلکہ میدان صلاح اور اصلاح میں بڑے جچے تلے قدم ڈال کر ہی ممکن ہے اور یہ کہ ہر شخص ہر میدان میں اس تہذیبی عمارت کی تعمیر کے لیے بھرپور وقت دے۔ اﷲ تعالیٰ سے دعا ہے کہ وہ ہر ایک کو ایسے کاموں کی توفیق دے جو اس کی دنیا و آخرت میں مفید ہوں۔