کتاب: اجتماعی نظام - صفحہ 70
(114) مرد و زن کی باہمی خط و کتابت السلام علیکم ورحمة اللہ وبرکاتہ جب کوئی مرد کسی اجنبی عورت کو خط لکھے اور وہ ایک دوسرے سے محبت کریں تو کیا یہ کام بھی حرام ہو گا؟ الجواب بعون الوہاب بشرط صحة السؤال وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاتہ! الحمد للہ، والصلاة والسلام علیٰ رسول اللہ، أما بعد! یہ کام جائز نہیں ہے کیونکہ یہ بھی دونوں کے درمیان جنسی جذبات کو بھڑکائے گا اور طبیعت میں ملاقات کا اشتیاق پیدا کرے گا، اس طرح کی عشقیہ خط و کتاب فتنے کو جنم دیتی ہے اور دل میں بدکاری کی محبت کے بیج بوتی ہے جس سے انسان کے حرام کاری میں مبتلا ہونے کا شدید خطرہ ہوتا ہے لہٰذا جو شخص اپنے نفس کی حفاظت کرنا چاہیے اس کے لئے ہماری نصیحت ہے کہ وہ اپنے دین و عزت کی حفاظت کی خاطر اس طرح کی خط و کتاب کو یکسر ترک کردے۔ ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب فتاویٰ اسلامیہ ج3ص93