کتاب: اجتماعی نظام - صفحہ 288
میرے چچا مجھے خواب میں مارنا چاہتا ہے السلام علیکم ورحمة اللہ وبرکاتہ میرا ایک چچا تھا مجھے پسند نہیں کیا کرتا تھا اورمجھے مارابھی کرتا تھا اوراب وہ فوت ہوچکا ہے لیکن ان دنوں مجھے بہت ڈراؤنے خواب آنے لگے ہیں،میں دیکھتا ہوں کہ وہ مجھے اورمیری چھوٹی بیٹی کو پکڑنا چاہتا ہے لیکن میں بھاگ اٹھتا ہوں اوروہ مجھے پکڑ نہیں سکتا،امید آپ میری رہنمائی فرمائیں گےکہ ان ڈراؤنے خوابوں سے نجات مل جائے؟ الجواب بعون الوہاب بشرط صحة السؤال وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاتہ الحمد للہ، والصلاة والسلام علیٰ رسول اللہ، أما بعد! یہ اوراس قسم کے ڈراونے خواب شیطان کی طرف سے ہوتے ہیں اورمسلمان کے لئے حکم شریعت حکم شریعت یہ ہے کہ وہ جب کوئی ناپسندیدہ خواب دیکھے تواپنے بائیں طرف تین بار تھوک دے اورشیطان سے اوراس خواب کے شر سے بھی اللہ تعالی سے تین بار پناہ مانگے اورپھر کروٹ بدل کر لیٹ جائے تویہ خواب اس کے لئے نقصان دہ نہ ہوگا،اس کے بارے میں کسی کو بتائے بھی نہیں کیونکہ صحیح حدیث میں ہے کہ نبی کریمﷺنےفرمایا‘‘اچھا خواب اللہ تعالی کی طرف سےہوتا ہے اوربراخواب شیطان کی طرف سے اگرکوئی براخواب دیکھے توتین باراپنے بائیں طرف تھوک دے اورپھر پہلو بدل کرلیٹ جائے تویہ براخواب اس کے لئے نقصان دہ نہ ہوگا،اس کے بارے میں کسی کو بتائے بھی نہیں اوراگرخواب اچھا ہو تو اللہ تعالی کی حمدبیان کرے اورجس کو پسند کرے بتابھی دے۔’’     مقالات وفتاویٰ ابن باز صفحہ 424