کتاب: فقہی احکام و مسائل - صفحہ 137
على كل شيء قدير"[1] سیدہ اُ م سلمہ رضی اللہ عنہا اور سیدنا ابو ایوب انصاری رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ مندرجہ بالا کلمات مغرب کی نماز کے بعد بھی دس مرتبہ پڑھے جائیں۔[2] علاوہ ازیں مغرب اور فجر کی نماز کے بعد:"اللّٰهم أجرني من النار""الٰہی !مجھے آگ سے بچانا ۔"کے کلمات بھی سات مرتبہ پڑھے جائیں۔[3] 4۔ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ہے: "جو شخص ہر فرض نماز کے بعد تینتیس (33) مرتبہ(سبحان اللّٰه)اورتینتیس(33)مرتبہ(الحمدللّٰه) اورتینتیس (33)مرتبہ(اللّٰه اكبر) کہے اور سو کا عدد مکمل کرنے کے لیے ایک مرتبہ یہ کلمات پڑھے: "لا إله إلا اللّٰه وحده لا شريك له ، له الملك وله الحمد وهو على كل شيء قدير" "ایک اللہ کے سوا کوئی حقیقی معبود نہیں ہے، اس کا کوئی شریک نہیں ،ملک اسی کا ہے اور تعریف بھی اسی کے لیے ہے اور وہی ہر چیز پر خوب قادر ہے۔"تو اگر اس کے سمندر کی جھاگ کے برابر بھی ہوں گے تو معاف کر دیے جائیں گے۔"[4] 5۔پھر آیۃ الکرسی سورۃ اخلاص سورہ فلق اور سورۃ ناس پڑھے ۔[5]رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:جو شخص ہر نماز کے بعد آیۃ الکرسی پڑھے گا تو اس کے جنت میں داخل ہونے کے لیے موت کے سوا اور کوئی شے رکاوٹ نہ ہو گی۔"[6] ایک اور روایت میں یوں ہے: [1] ۔جامع الترمذی الدعوات باب فی ثواب کلمۃ التوحید التی فيها:الھا واحداًاحداً صمداً حدیث 3474۔وصحیح الترغیب والترھیب للالبانی 1/321حدیث 472۔ [2] ۔مسند احمد 6/298۔وموارد الظمآن الی زوائد ابن حبان باب مایقول من الذکر بعد الصلاۃ حدیث 2341۔(صحیح بخاری میں ہے جس نے یہ کلمات سو مرتبہ پڑھے اسے دس غلام آزاد کرنے کا ثواب ہو گا۔ سو نیکیاں ملیں گی سو گناہ مٹا دیے جائیں گے اور صبح سے شام تک شیطان سے حفاظت میں رہے گا۔صحیح بخاری بدء الخلق باب صفۃ ابلیس وجنودہ ،حدیث 3293۔ [3] ۔سنن ابن داود الادب باب مایقول اذا اصبح ؟ حدیث 5079والسنن الکبری للنسائی عمل الیوم واللیلہ باب ثواب من استجار من النارسبع مرات حدیث 9939۔ [4] ۔صحیح مسلم المساجد باب استحباب الذکر بعد الصلاۃ و بیان صفته حدیث 595۔597 [5] ۔سنن ابی داؤد الوتر باب فی الاستغفار حدیث 1523وموارد الظمآن الی زوائد ابن حبان باب قراء ۃ المعوذات دبرالصلاۃ ،حدیث 2347۔ [6] ۔السنن الکبری للنسائی عمل الیوم واللیلہ باب ثواب من قر أآیۃ الکرسی دبر کل صلاۃ حدیث 9928والمعجم الکبیر للطبرانی 8/134۔حدیث7532۔