کتاب: دعا کے مسائل - صفحہ 98
أَ لْأَدْعِیَـــۃُ فِی الصِّیَامِ روزوں سے متعلق دعائیں مسئلہ نمبر 134 روزہ افطار کرنے کی دعا درج ذیل ہے۔ عَنْ ابْنِ عُمَرَ رَضِیَ اللّٰہُ عَنْہُمَا قَالَ: کَانَ النَّبِیُّ صلي اللّٰه عليه وسلم اِذَا اَفْطَرَ قَالَ ]ذَہَبَ الظَّمَآئُ وَابْتَلَّتِ الْعُرُوْقُ وَثَبَتَ الْاَجُرُ اِنْ شَائَ اللّٰہُ[۔ رَوَاہُ اَبُوْ دَاؤدَ[1] (حسن) حضرت عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہما کہتے ہیں نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم جب روزہ افطار کرتے تو فرماتے((پیاس ختم ہوگئی، رگیں تر ہوگئیں اور روزے کا ثواب ان شاء اللہ پکا ہوگیا۔))‘‘ اسے ابوداؤد نے روایت کیا ہے۔ مسئلہ نمبر 135 لیلۃ القدر میں یہ دعا مانگنی مسنون ہے۔ عَنْ عَائِشَۃَ رَضِیَ اللّٰہُ عَنْہَا قَالَتْ : قُلْتَ یَا رَسُوْلَ اللّٰہِ صلي اللّٰه عليه وسلم اَرَاَیْتَ اِنْ عَلِمْتُ اَیُّ لَیْلَۃٍ لَیْلَۃُ الْقَدْرِ مَا اَقُوْلُ فِیْہَا ؟ قَالَا : قُوْلِیْ ]اَللّٰہُمَّ اِنَّکَ عَفُوٌّ تُحِبُّ الْعَفْوَ فَاعْفُ عَنِّیْ [۔ رَوَاہُ التِّرْمِذِیُّ[2] (صحیح) حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا فرماتی ہیں میں نے عرض کیا’’یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ! اگر مجھے پتہ چل جائے لیلۃ القدر کون سی رات ہے تو کیا کہوں؟‘‘آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا ’’کہو((اے اللہ! تو معاف کرنے والا ہے معاف کرنا پسند کرتا ہے مجھے معاف فرما۔))‘‘ اسے ترمذی نے روایت کیا ہے۔ مسئلہ نمبر 136 رمضان المبارک(اور دوسرے مہینوں)کا چاند دیکھ کر درج ذیل دعا مانگنی چاہئے عَنْ طَلْحَۃَ بْنِ عُبَیْدِ اللّٰہ رضی اللّٰه عنہ اَنَّ النَّبِیَّ صلي اللّٰه عليه وسلم کَانَ اِذَا رَآیَ الْہِلاَلِ قَالَ [1] صحیح سنن ابی داؤد ، للالبانی ، الجزء الثانی ، رقم الحدیث 2066 [2] صحیح سنن الترمذی ، للالبانی ، الجزء الثالث ، رقم الحدیث 2789