کتاب: دعا کے مسائل - صفحہ 75
﴿رَبَّنَا لاَ تَجْعَلْنَا فِتْنَۃً لِلْقَوْمِ الظّٰلِمِیْنَ، وَ نَجِّنَا بِرَحْمَتِکَ مِنَ الْقَوْمِ الْکٰفِرِیْنَ﴾ ’’اے ہمارے رب!ہمیں ظالم لوگوں کا تختہ مشق نہ بنا اور اپنی رحمت کے صدقے کافر لوگوں سے ہمیں نجات دے۔‘‘(سورۃیونس، آیت نمبر86-85) ﴿رَبِّ نَجِّنِیْ مِنَ الْقَوْمِ الظّٰلِمِیْنَ﴾(21:28) ’’اے ہمارے رب!مجھے ظالم لوگوں سے نجات دلا۔‘‘(سورۃ قصص، آیت نمبر21) مسئلہ نمبر 100 مجاہدین کی دعائیں(دشمن پر غلبہ حاصل کرنے اور ثابت قدم رہنے کے لئے)۔ ﴿رَبَّنَا اَفْرِغْ عَلَیْنَا صَبْرًا وَّ ثَبِّتْ اَقْدَامَنَا وَانْصُرْنَا عَلَی الْقَوْمِ الْکٰفِرِیْنَ﴾(250:2) ’’اے ہمارے رب!ہمیں فیضان صبر سے نواز ہمیں ثابت قدم رکھ اور کافروں کے مقابلے میں ہماری مدد فرما۔‘‘(سورۃ بقرہ، آیت نمبر250) ﴿رَبَّنَا اغْفِرْلَنَا ذُنُوْبَنَا وَاِسْرَافَنَا فِیْ اَمْرِنَا وَ ثَبِّتْ اَقْدَامَنَا وَانْصُرْنَا عَلَی الْقَوْمِ الْکٰفِرِیْنَ﴾(147:3) ’’اے ہمارے رب!ہمارے گناہ بخش دے ہمارے معاملات میں ہماری زیادتیوں کو معاف فرما ہمیں ثابت قدم رکھ اور کافروں کے مقابلے میں ہماری مدد فرما۔‘‘(سورۃآل عمران، آیت نمبر147) مسئلہ نمبر 101 گناہوں سے معافی مانگنے نیز دین و دنیا کے معاملے میں ناقابل برداشت مصائب و آلام سے بچنے کی دعا۔ ﴿رَبَّنَا لاَ تُؤَاخِذْنَا اِنْ نَّسِیْنَا اَوْ اَخْطَأْنَا رَبَّنَا وَ لاَ تَحْمِلْ عَلَیْنَا اِصْرًا کَمَا حَمَلْتَہٗ عَلَی الَّذِیْنَ مِنْ قَبْلِنَا رَبَّنَا وَ لاَ تُحَمِّلْنَا مَا لاَ طَاقَۃَ لَنَا بِہٖ ج وَاعْفُ عَنَّا ط وَاغْفِرْلَنَا ط وَارْحَمْنَا ط اَنْتَ مَوْلاَنَا فَانْصُرْنَا عَلَی الْقَوْمِ الْکٰفِرِیْنَ﴾(286:2)