کتاب: دعا کے مسائل - صفحہ 123
عَنْ اَبِیْ ہُرَیْرَۃَ رضی اللّٰه عنہ قَالَ : کَانَ رَسُوْلُ اللّٰه صلي اللّٰه عليه وسلم یَقُوْلُ ] اَللّٰہُمَّ اِنِّیْ اَعُوْذُبِکَ مِنَ الْاَرْبَعِ مِنْ عِلْمٍ لاَ یَنْفَعُ وَ مِنْ قَلْبٍ لاَ یَخْشَعُ وَ مِنْ نَفْسٍ لاَ تَشْبَعُ وَ مِنْ دُعَائٍ لاَّ یَسْمَعُ[ رَوَاہُ اَبُوْدَاؤٗدَ وَ اَحْمَدُ وَابْنُ مَاجَۃَ [1] (صحیح) حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم یہ دعا مانگا کرتے تھے((یا اللہ!میں چار چیزوں سے تیری پناہ مانگتا ہوں(1)ایسا علم جو نفع نہ دے(یعنی جس کے مطابق عمل نہ ہو)(2)ایسا دل جو خوف نہ کھائے(3)ایسا نفس جو آسودہ نہ ہو(4)اور ایسی دعا جو قبول نہ ہو۔))اسے ابو داؤد،احمداور ابن ماجہ نے روایت کیا ہے۔ مسئلہ نمبر 168 حق کی مخالفت نفاق اور برے اخلاق سے پناہ مانگنے کی دعا۔ عَنْ اَبِیْ ہُرَیْرَۃَ رضی اللّٰه عنہ اَنَّ رَسُوْلَ اللّٰہِ صلی اللّٰه علیہ وسلم کَانَ یَدْعُوْ ]اَللّٰہُمَّ اِنِّیْ اَعُوْذُبِکَ مِنَ الشَِّقَاقِ وَ النِّفَاقِ وَسُوْئِ الْاَخْلاَقِ [ رَوَاہُ النِّسَائِیّ [2] (صحیح) حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم یہ دعا مانگا کرتے تھے((یا اللہ! میں حق کی مخالفت‘ نفاق اور برے اخلاق سے تیری پناہ مانگتا ہوں۔))اسے نسائی نے روایت کیا ہے۔ مسئلہ نمبر 169 فکر اور غم، کمزوری اور سستی، بزدلی اور بخیلی، قرض اور لوگوں کے ظلم سے پناہ مانگنے کی دعا۔ عَنْ اَنَسٍ رضی اللّٰه عنہ قَالَ : اَنَّ رَسُوْلَ اللّٰہِ صلی اللّٰه علیہ وسلم کَانَ اِذَا دَعَا قَالَ] اَللّٰہُمَّ اِنِّیْ اَعُوْذُبِکَ مِنَ الْہَمِّ وَالْحَزَنِ وَالْعَجْزِ وَالْکَسَلِ وَالْبُخْلِ وَالْجُبْنِ وَ ضَلَعِ الدَّیْنِ وَ غَلَبَۃِ الرِّجَالِ [ رَوَاہُ النِّسَائِیُّ [3] (صحیح) حضرت انس رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم یہ دعا مانگا کرتے تھے((یااللہ! میں فکر اور غم‘ کمزوری اور سستی‘ بزدلی اور بخیلی‘ قرض کے بوجھ اور لوگوں کے غلبہ سے تیری پناہ مانگتا ہوں۔))اسے نسائی نے روایت کیا ہے۔ مسئلہ نمبر 170 کسی چیز کے نیچے آنے، جلنے، ڈوبنے اور زیادہ بڑھاپے کی عمر میں [1] صحیح سنن ابن ماجۃ، للالبانی ، الجزء الثانی ، رقم الحدیث 3094 [2] صحیح سنن النسائی، للالبانی ، الجزء الثالث، رقم الحدیث 5035 [3] صحیح سنن النسائی، للالبانی ، الجزء الثالث ، رقم الحدیث 5039