کتاب: دعا کے آداب و شرائط کتاب وسنت کی روشنی میں - صفحہ 232
روایت کرتے ہیں کہ آپ نے فرمایا: ’’الغازي في سبیل اللّٰہ،والحاج،والمعتمر وفد اللّٰہ: دعاھم فأجابوہ،وسألوہ فأعطاھم‘‘[1] اللہ کی راہ میں جہاد کرنے والا،حاجی،اور عمرہ کر نے والا یہ اللہ کی جماعت ہیں ،انھیں اللہ نے بلایا تو انھوں نے لبیک کہا،اور انھوں نے اللہ سے مانگا تو اللہ نے انہیں عطا فرمایا۔ ۲۰- اللہ کا کثرت سے ذکر کرنے والے کی دعاء: حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے ،وہ بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: ’’ثلاثۃ لا یرد دعاؤھم: الذاکر للّٰہ کثیراً،و دعوۃ المظلوم،والإمام المقسط‘‘[2] [1] ابن ماجہ،حدیث نمبر:(۲۸۹۳)شیخ البانی رحمہ اللہ نے اسے صحیح ابن ماجہ(۲/۱۴۹)اور سلسلۃ الاحادیث الصحیحۃ(حدیث نمبر:۱۸۲)۴/۴۳۳ میں حسن قرار دیا ہے۔ [2] شعب الایمان للبیھقي ۲/۳۹۹،و طبرانی کتاب الدعاء،حدیث نمبر:(۱۲۱۱)اور شیخ البانی رحمہ اللہ نے اسے سلسلۃ الأحادیث الصحیحۃ(۳/۲۱۱،حدیث نمبر:۱۲۱۱)میں حسن قرار دیا ہے۔