کتاب: دوستی اور دشمنی (کتاب و سنت کی روشنی میں) - صفحہ 67
4 امریکی صحافی رچ لاری نے مسلمانوں کوسبق سکھانے کے لئے مکہ مکرمہ پر ایٹم بم سے حملہ کرنے کی تجویز پیش کی ہے،امریکہ کے خلاف کسی ایٹمی حملہ کی صورت میں زیادہ ترقارئین نے مکہ مکرمہ پر ایٹمی اسلحہ استعمال کرنے کی حمایت کی ہے۔[1] نام نہاد دہشت گردی کے خاتمہ کے لئے پاکستان کے تمام تر مخلصانہ بلکہ فدویانہ تعاون کے باوجود،پاکستان کے خلاف کفار کا غیظ وغضب ٹھنڈاہونے میں نہیں ارہاکسی خونخوار بھیڑئیے کی طرح پاکستان پروہ اپنے دانت یوں کچکچارہے ہیں گویاان کا بس چلے تو پاکستان کوکچاچباڈالیں لیکن کسی’’غیبی قوت‘‘نے ان کے ہاتھ پاؤں باندھ رکھے ہیں جس وجہ سے وہ ہمت نہیں کرپارہے ایک طرف وہ اپنے مفادات کے حصول کے لئے مشرف حکومت کی خوشامدیں بھی کرتے ہیں اور ان کی درازیٔ عمر کی دعائیں بھی مانگتے ہیں [2] اور دوسری طرف دھونس اور دھمکیوں کے ساتھ مطالبات کی نت نئی فہرستیں بھی تھماتے جارہے ہیں۔ہماری پسپائی کا شروع دن سے ہی یہ عالم ہے کہ جیسے ہمارے پاؤں کے نیچے زمین ہی نہ ہواور ہم سطح آب پرچل رہے ہوں۔ سچی بات یہ ہے کہ 11 ستمبرکے بعد امریکہ کاحواری بن کر ہم نے اپنے لئے مشکلات اور مصائب کا ایک نہ ختم ہونے والاسلسلہ شروع کرلیاہے آج ہم ایسی خطرناک بندگلی میں پہنچ چکے ہیں جہاں سے نجات کا دوردور تک کوئی راستہ نظرنہیں اتا۔یہ دراصل سزا ہے عقیدہ الولاء والبراء سے انحراف کی۔11ستمبر کے بعد اسلامی ملک افغانستان پر حملہ کرنے کے لئے کفار کو پاکستان کی فضائی حدود اور زمینی رابطوں کو استعمال کرنے کی اجازت دینا پاکستان کے بحری اور ہوائی اڈوں اور سرحدات کو استعمال کرنے کی اجازت دینا، [1] اردو نیوز،جدہ 15مارچ 2002ء. [2] چندبیانات ملاحظہ ہوں: 1. امریکی وزیر خارجہ کولن پاول نے ڈاکٹر عبدالقدیرکے خلاف کاروائی پرجنرل مشرف کی تعریف کی اور اسے ایک دلیرانہ اقدام قرار دیا (نوائے وقت،لاہور29فروری2004ء) ۔2. دہشت گردی کے خلاف پاکستان کا کردار یادرکھیں عالمی برادری کے ساتھ پاکستان نے ہراول دستہ کا کردار اداکیاامریکی سفیروینڈی چیمیرلین کا بیان(اردونیوز،جدہ،6مئی2002ء) ۔3. دہشت گردی کے خلاف پاکستانی تعاون امریکہ کے لئے اعزازہے امریکی نائب وزیر دفاع پال ولفوٹر(اردو نیوز، جدہ 26 مارچ 2004ء) ۔4. جنرل مشرف کے لئے اسرائیلی پارلیمنٹ میں دعاکی گئی(نوائے وقت،11مارچ2004ء)۔ 5. سابق اسرائیلی وزیراعظم شیمون پیریزنے کہاہے کہ ایک اچھے یہودی لڑکے کی طرح میں نے کبھی خواب میں بھی نہ سوچاتھاکہ میں پاکستان کے صدرمشرف کی حفاظت کے لئے دعاکروں گا۔(ترجمان القرآن ستمبر2003ء بحوالہ نیوز ویک 11ستمبر2001ء).