کتاب: بیماریاں اور ان کا علاج مع طب نبوی - صفحہ 293
اسلئے کہ جسم ضرورت سے زیادہ کیلشیئم پیشاب کے راستہ سے خارج کر دیتا ہے۔ اسکے برعکس دوسرے وٹامنز مثلاً وٹامن A ، D، E اور K پانی میں حل نہیں ہوتے اسلئے غیر استعمال شدہ حصہ جسم میں جم جاتا ہے جو نقصان دہ ہیں۔ لہٰذا وہ چیزیں جن میں وٹامنز A ، D، E اور K ہیں مثلاً گھی، مکھن وغیرہ کم کھائیں۔ اگر یہ وٹامنز آپ نے کم بھی لئے تو نقصان نہیں ہوگا۔ اسلئے ان وٹامنز کی جو کمی رہ جاتی ہے وہ جسم میں موجود جگر خود بنا لیتا ہے۔ اسی طرح دھوپ جسم میں وٹامن D بناتی ہے۔ اَ للّٰہُ اَ کْبَرُ وَ لِلّٰہِ الْحَمْدُ بکری گھاس کھاتی ہے اسکے جسم میں خوب چربی ہوتی ہے۔ یہ مکھن اور گھی نہیں کھاتی۔ یہ اللہ تعالیٰ کا نظام ہے۔ آپ بھی بغیر گھی والے کھانے کھائیں۔ اِنْ شَائَ اللّٰہُ تَعَالٰی صحت بہترین رہے گی۔ ٭ کولسٹرول کنٹرول:۔ اچھا اور ضروری کولسٹرول(HDL) جسم میں کم ہو تو پیدل چلنے سے (کم از کم ایک گھنٹہ روزانہ) بڑھتا رہتا ہے اور نقصان دہ کولسٹرول(LDL) کم ہونا شروع ہو جاتا ہے۔ نقصان دہ کو لسٹرول LDLکم کرنے کیلئے مہنگی ادویہ کی خوراک بھی اِنْ شَائَ اللّٰہُ تَعَالٰی ایک ماہ میں کم ہو کر چند ماہ میں بالکل ختم ہو جاتی ہے۔ اپنا علاج پیدل چلنے، کم کھانے اور زیادہ پانی پینے سے کریں۔ HDL کولسٹرول 35 mg / dl سے زیادہ رہنا چاہئیے اور LDL کولسٹرول 130 mg /dlسے کم رہنا چاہئیے۔ دل کے مریضوں کیلئے تو LDL کولسٹرول 100 mg / dl سے کم رہنا ضروری ہے۔ یہی جدید تحقیق ہے۔ اسی طرح Triglycerides ہے جو 150 mg/dl سے کم رہنا بھی ضروری ہے۔ Triglycerides اور LDL زیادہ ہو تو روزانہ شام کو بھی خالی پیٹ ایک گھنٹہ پیدل چلیں یعنی 2 گھنٹہ ہر روز۔ اسطرح Triglycerides اور LDL کم ہونا شروع اور ادویہ سے چھٹکارا چند ماہ