کتاب: بیماریاں اور ان کا علاج مع طب نبوی - صفحہ 257
کو واقعی سکون بھی ملے گا اور اگر وقت آگیا ہے تو مریض کی آخری بات کلمہ ہو گی۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:۔ ’’مرتے وقت جسکی زبان پر آخری الفاظ لَآاِ لٰـــہَ اِ لَّا ا للّٰہُ ہونگے وہ جنت میں داخل ہو گا۔‘‘ (ابوداؤد) 7 .موت کے و قت اللہ سے معافی اور بخشش کی توقع غالب رکھیئے۔ 8. آپ صلی اللہ علیہ وسلم ایک قریب ا لمرگ نوجوان کے پاس تشریف لے گئے اور پوچھا ’’تم کیا محسوس کرتے ہو؟‘‘ اس نے جواب دیا: ’’یا ر سو ل اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اپنے گناہوں کے انجام سے ڈرتا ہوں اور اللہ تعا لیٰ کی رحمت سے پُر امید بھی ہوں۔‘‘ رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:۔ ’’اس موقع پر جب کسی کے دل میں خوف اور امید جمع ہوں تو اللہ تعالیٰ حسب امید فضل و کرم فرماتے ہیں اور خوف سے محفوظ رکھتے ہیں۔‘‘ (ترمذی)9.’’لذ توں کو مٹانے و الی چیز (موت)کوکثرت سے یادکرو۔‘‘(ترمذی) 10. ’’موت کے وقت مومن کی پیشانی پر پسینہ آ جاتا ہے۔‘‘ (ترمذی) 11. ’’قرض کے علاوہ شہید کے سارے گناہ معاف کر دئیے جاتے ہیں۔‘‘ (مسلم) اسلئے کوشش کیجئے قرض نہ لیں اوراگر مجبوراً لیں توکوشش کریں کہ جلدی ادا کردیں، ورثاء کو بھی بتائیں اور لکھ بھی دیں۔ 12. ’’جس نے اپنے آپ کو پہاڑ سے گرا کر ہلاک کیا وہ جہنم میں جائے گا اور ہمیشہ اپنے آپ کو اسی طرح گراتا رہیگا۔ جہنم میں ہمیشہ اس کی یہی حالت رہے گی۔ جس نے زہر کھا کر اپنے آپ کو ہلاک کیا جہنم میں وہی زہر اس کے ہاتھ میں ہو گا جسے کھاتا رہے گا اور جہنم میں وہ ہمیشہ اسی حالت میں رہے گا۔ جس نے اپنے آپ کو کسی ہتھیار سے ہلاک کیا وہی ہتھیار جہنم میں اس کے ہاتھ میں ہو گا جس سے وہ اپنے آپکو مارتا رہے گااور جہنم میں ہمیشہ اسی حالت میں رہے گا ‘‘(بخاری) اَللّٰھُمَّ لَا تَجْعَلْنَا مِنْھُمْ بِرَحْمَتِکَ یَآ اَ رْحَمَ الرَّاحِمِین (ترجمہ)’’ اے بہت ہی زیادہ رحم کرنے والے اللہ پاک، اپنی رحمت سے ہمیں ان لوگوں(جہنم والوں ) میں شمار نہ فرمائیے۔‘‘ آمین