کتاب: اگر تم مومن ہو - صفحہ 46
اﷲتعالیٰ کے ارشادات ہیں کہ: ﴿ ذٰلِکَ بِاَنَّ اللّٰہَ ھُوَ الْحَقُّ وَاَنَّ مَا یَدْعُوْنَ مِنْ دُوْنِہٖ ھُوَ الْبَاطِلُ وَاَنَّ اللّٰہَ ھُوَ الْعَلِیُّ الْکَبِیْرُ﴾ [الحج:62] ’’ یہ (اس لئے کہ) درحقیقت اﷲہی حق ہے اور یہ کہ جن کو یہ اﷲکے سوا پکارتے ہیں درحقیقت وہ باطل ہیں اور یہ کہ درحقیقت اﷲہی بالا دست اور بہت بڑا ہے۔‘‘ ﴿ فلَاتَکُ فِیْ مِرْیَۃٍ مِّمَّا یَعْبُدُ ھَؤلَآئِ﴾ [ھود:109] ’’ تم ان کے (باطل ہونے کے) حوالے سے کسی قسم کے شک میں نہ رہو جن کی یہ لوگ عبادت کر رہے ہیں﴾ ’’اَلَمْ تَرَ اِلَی الَّذِیْنَ اُوْتُوْا نَصِیْبًا مِّنَ الْکِتٰبِ یُؤْمِنُوْنَ بِالْجِبْتِ وَالطَّاغُوْتِ وَیَقُوْلُوْنَ لِلَّذِیْنَ کَفَرُوْا ھَؤُلَائِ اَھْدٰی مِنَ الَّذِیْنَ اٰمَنُوْا سَبِیْلًا o اُوْلٰئِکَ الَّذِیْنَ لَعَنَھُمُ اللّٰہُ وَمَنْ یَّلْعَنِ اللّٰہُ فَلَنْ تَجِدَ لَہٗ نَصِیْرًا﴾ [النساء:51…52] ’’ کیاآپ نے ان لوگوں کو نہیں دیکھا جنہیں کتاب کے علم میں سے کچھ حصہ دے دیا گیا ہے اور ان کا حال یہ ہے کہ جبت اور طاغوت پر ایمان رکھتے ہیں اور کافروں کے متعلق کہتے ہیں کہ ایمان لانے والے سے تو یہی زیادہ سیدھے راستے پر ہیں، ایسے ہی لوگ ہیں جن پر اﷲنے لعنت کر دے پھر تم اس کا کوئی حامی و مددگار نہ پاؤ گے۔‘‘ ب۔ طاغوت کی عبادت سے اجتناب کرنا۔ اﷲتعالیٰ کا ارشاد ہے کہ:۔ ﴿ والَّذِیْنَ اجْتَنَبُوا الطَّاغُوْتَ اَنْ یَّعْبُدُوْھَا وَاَنَا بُوْا اِلَی اللّٰہِ لَھُمُ الْبُشْرٰی﴾ ’’ اور جن لوگوں نے طاغوت سے اجتناب کر لیا کہ اس کی عبادت کریں اور اﷲکی