کتاب: آیت الکرسی کی فضیلت اور تفسیر - صفحہ 255
کیفیت، تشبیہ اور تاویل کے بغیر اس کے وجود پر ایمان رکھنا فرض ہے۔ اَلْعَلِيُّ] ہیں، کہ کوئی چیز ان سے اوپر نہیں، وہ قاہر ہیں، کوئی چیز بھی ان پر غالب نہیں، ان کی شان و عظمت اور مقام و رتبہ سب سے بلند ہے۔ وہ ہی [اَلْعَظِیْمُ] ہیں، کہ ہر چیز ان کی عظمت کے سامنے معمولی اور حقیر ہے۔ ب: اپیل اس موقع پر باادب تاکیدی گزارش ہے ۱: روئے زمین کے تمام مسلمان حضرات و خواتین سے، کہ وہ اس عظیم آیت شریفہ کی تلاوت اور اس میں تدبّر کو روزمرہ زندگی کے لیل و نہار کا معمول بنائیں۔ اس میں بیان کردہ عقیدہ اختیار کریں، اس کی روشنی میں اپنی زندگی کے نقشے ترتیب دیں۔ آیت الکرسی کے پیغام کو دنیا میں تاحدِّ استطاعت پھیلانے کو اپنی زندگی کا نصب العین بنالیں۔ ۲: مشرق و مغرب میں بسنے والے تمام غیر مسلم حضرات و خواتین سے، کہ وہ توجہ اور دھیان سے آیت الکرسی کو سنیں، پڑھیں اور اس میں تدبر کریں، شاید کہ اللہ تعالیٰ اس طرزِ عمل کو، حق کے لیے ان کے سینوں کے کھلنے اور دنیا و آخرت میں کامیاب ہونے کا سبب بنادیں۔ وَمَا ذٰلِکَ عَلَی اللّٰہِ بِعَزِیْزٍ۔[1]  [1] [ترجمہ: اور اللّٰه تعالیٰ کے لیے یہ کچھ مشکل نہیں]