سورة الاعراف - آیت 10

وَلَقَدْ مَكَّنَّاكُمْ فِي الْأَرْضِ وَجَعَلْنَا لَكُمْ فِيهَا مَعَايِشَ ۗ قَلِيلًا مَّا تَشْكُرُونَ

ترجمہ ترجمان القرآن - مولانا ابوالکلام آزاد

اور (دیکھو) ہم نے تمہیں (یعنی نوع انسانی کو) زمین میں (قدرت و اختیار کے ساتھ) بسا دیا اور زندگی کے سرو سامان مہیا کردیئے مگر بہت کم ایسا ہوتا ہے کہ تم شگر گزار رہو۔

تفسیر تیسیر الرحمن لبیان القرآن - محمد لقمان سلفی صاحب

(7) اللہ تعا نے اپنی گو نا گوں نعمتوں کی یاد دلا کر بندوں کو اپنے اوامر کی اتباع اور نو ہی سے اجتناب کی تر غیب دلائی ہے۔ خالق کائنات نے زمین کو انسانوں کے لیے سکون وقرار کی جگہ بنائی ہے، اس پر پہاڑ بسائے نہریں جاری کیں، شاندار رہائشی مکانات بنانا سکھایا، زمین پر پائی جا نے والی چیزوں اور جانوروں سے استفادہ کو مباح قرار دیا۔ اور کھانے اور پینے کی مختلف اشیاء کو مہیا کردیا، ان نعمتوں کا تقاضا یہ تھا کہ انسان اللہ کا خوب شکر ادا کرتا اور اس کی خوب عبادت کرتا، لیکن واقعہ یہ ہے کہ اکثر وبیشتر انسان اللہ کا کم شکر ادا کرتے ہیں ،