کتاب: سیدنا عمر بن خطاب رضی اللہ عنہ شخصیت اور کارنامے - صفحہ 48
وحقیقت کو پہچان لیا، ہدایت وگمراہی، ایمان وکفر اور حق وباطل کے درمیان حقیقی فرق سے واقف ہوگئے تو ایک بہت اہم بات کہی: (( انما تنقض عری الاسلام عروۃ عروۃ اذا نشأَ فی الاسلام من لا یعرف الجاہلیۃ۔))  ’’جب اسلام میں ایسے لوگ پروان چڑھنے لگیں جو جاہلیت سے ناواقف ہوں تو اسلام کی ایک ایک جڑ ٹوٹتی چلی جائے گی۔‘‘