کتاب: مسنون ذکر الٰہی، دعائیں - صفحہ 67
لگاکر) اسی طرح پڑھتے تھے۔ ہر ضرورت میں کافی: 18۔ حضرت عبداللہ بن خبیب رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ ہم بارش اور شدید اندھیرے والی رات میں نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی تلاش میں نکلے، تاکہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم ہمیں نماز پڑھائیں۔ ہم نے آپ صلی اللہ علیہ وسلم کو ڈھونڈ لیا تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: ’’کہہ‘‘ میں نے کچھ نہ کہا۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم پھر فرمایا: ’’کہہ‘‘ میں نے کہا: یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ! کیا کہوں؟ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: ’’صبح و شام﴿ قُلْ هُوَ اللّٰهُ أَحَدٌ﴾ اور مُعَوّذَتَیْن ﴿ قُلْ أَعُوذُ بِرَبِّ الْفَلَقِ﴾ اور ﴿ قُلْ أَعُوذُ بِرَبِّ النَّاسِ﴾ تین تین مرتبہ پڑھا کرو۔ تجھے ہر ضرورت میں یہ کافی ہیں۔‘‘  19 ۔نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم صحابہ کرام رضی اللہ عنہم کو سکھلاتے تھے کہ جب تم میں سے کوئی صبح کرے تو یہ کہے: