کتاب: مسنون ذکر الٰہی، دعائیں - صفحہ 375
کرتا ہے اور اس کے ساتھ جو کچھ کوئی مانگے وہ دیتا ہے۔‘‘ اور اُس آدمی نے یہ کہتے ہوئے دُعا کی تھی: (( اَللّٰھُمَّ اِنِّیْ اَسْئَلُکَ بِاَنِّیْ اَشْھَدُ اَنَّکَ اَنْتَ اللّٰہُ لَآ إِلٰہَ اِلَّا اَنْتَ الْاَحَدُ الصَّمَدُ الَّذِیْ لَمْ یَلِدْ وَلَمْ یُوْلَدْ وَلَمْ یَکُن لَّہٗ کُفُواً أَحَدٌ ))  ’’اے اللہ! میں تجھ سے سوال کرتا ہوں، جب کہ میں یہ گواہی دیتا ہوں کہ صرف تو ہی معبودِ برحق ہے تیرے سوا کوئی معبودِ حقیقی نہیں تویکتا و بے نیاز ہے، جس نے نہ کسی کو جنم دیا نہ اُسے کسی نے جنم دیا اور جس کا کوئی ہم سر و ہم پلہ نہیں ہے۔‘‘ 156۔ ایک حدیث میں اسمِ اعظم ان الفاظ میں قرار دیاگیا ہے: (( اَللّٰھُمَّ اِنِّیْ اَسْئَلُکَ بِاَنَّ لَکَ الْحَمْدَ لَا اِلٰہَ اِلَّا